Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2018 » April (page 2)

Monthly Archives: April 2018

Myth — نوشین کمبرانڑیں

“مچھیرے جال پھینکیں گے جو پتھریلے سمندر میں تو بجری رنگ ساری مچھلیاں اور ریت کے جھینگے سیمنٹ کی بنی سب سیپیاں بھی ہاتھ آئیں گی وہ مچھلی بھی ملے گی سانولے لڑکوں کو پانی سے کہ جس کے دل میں پتھر ہے سنا ہے جس میں قطرہ قطرہ ساگر ڈوب جائے گا وہ پتھر جس کے بارے میں لکھا ...

Read More »

اماں  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

پازیب چوڑی نتھنی ہار سنگھار سے بے نیاز ہے یہ بندھن زنجیر کی یاد دلاتے ہیں اماں تو آزاد ہے بس آواز ہے خوشبو ہے جھنکار ہے پیار کی دلار کی کبھی ڈانٹ بھی اماں جو ٹف لو ہے جھاڑ جھنکاڑ مٹا کر صاف شفاف شیشے کی مافق انسان ڈھالتی ہے اماں جو آزاد ہے

Read More »

غزل ۔۔۔ عبداللہ شوہاز

سال مٹّ انت ماہ بدل بنت سہب ہم بیگاہ بنت گوں تئی یاداں مئے زندئے چاریں موسم پر گوزنت پہ امیتے عمر گوست ودرائیں دنیا سمبھ اِت مئے تماہ کلمانٹ بیتاں جزم زاناں پیر بنت کد پدا بوجیگا مہرئے شار تئی آچار بیت کد مئے چمانی تیابا موج ارس ئے سمبر نت مہہ چہ تئی بیکانی بامیں لنجمی آدر کپیت ...

Read More »

نظم ۔۔۔ ثانی خان

دادخواہانِ شہر کے صف میں وہ بھی ہیں جن کی تسبیحات لہو۔۔ جن کا منبر ہے مقتلِ انساں بو بارود جن سے آتی ہو جن کے نعروں میں دادِ قاتل ہو کشت و خوں زندگی کا حاصل ہو رخ پہ آثارِ بود باطل ہو ہاتھ خنجر تو لب پہ بسمل ہو وہ قصیدہ حق سنائیں کیا شہ کا کردار وہ ...

Read More »

وحید نور

محوِسفر جنون کے ہیں ہم قدم سے ہم اس طرح سْرخرو ہیں وفا کے عَلَم سے ہم ہوتا ہے جانثاروں میں اپنا شمار بھی پہنچے ہیں اس مقام پہ اپنے ہی دم سے ہم تو لاکھ تفرقوں میں ہمیں بانٹ سْن مگر انسانیت شعار ہیں اپنے دھرم سے ہم آؤ کہ اب شروع کریں جنگ آخری ہتھیار تم اٹھاؤ، زبان ...

Read More »

نظم آباد ۔۔۔اسامہ امیر 

پہلی بار سارہ شگفتہ ایکسپریس میں بیٹھا علاقہ ثروت میں قدم رکھا ذی شان ساحل نظم آباد کے داخلی دروازے پر ایمیل اور دوسری نظمیں لئے استقبال کو پہنچیں افضال احمد سید گلابوں سے بھرے تھال اور بارش سے بھیگی ہوئی چھتری لئے سمندر کے کنارے ایک چھری کے ہمراہ موجود تھے “جو سیب کو ٹیڑھا کاٹتی ہے” میں پہلا ...

Read More »

بشانگ ۔۔۔ عبداللہ شوہاز

زندگی چوں وش اَت ہمے وڑاگندئے ہاسٹلابہ نشتین وبس بہ ونتیں۔تہت ئے سر آ پناد شپ وروچ پچ بوتیں اَنت وکتابانی الماری ئے دپ پچ بوتیں ۔ٹیبل ئے سراہم ہر وھدا کتاب ونبشتہ ئے تاک ایر بوتیں اَنت۔ کجام وھدا کہ دلا ھب پاد اتکیں کتابے زرتیں ونتیں یاچیز ے نشبتہ کُتیں۔ دومی چاہ ہم بازوش اِنت۔ زندگی بس ہمے ...

Read More »

عظمت کا ثبوت ۔۔۔ امرجلیل/محمد رفیق مغیری 

ایک موٹا شخص ایک پتلے شخص کو اپنی عظمت اور برتری کے دلائل دے رہا تھا۔ موٹے شخص کا نام ڈبو (بہت ہی موٹا) اور پتلے شخص کا نام سیپک (بہت ہی دبلا پتلا)۔ ڈبو جب پتلے سیپک کو اپنی عظمت اور برتری کے دلائل دے دے کر تھک گیا تو چیخ کے پوچھا۔ ’’کیا تم اب بھی میری عظمت ...

Read More »

مئے عشقیں تو بس ہوس ایں ۔۔۔ ڈاکٹر غلام بنی ساجد بزدار

امجد صاحودانی وتی روش ئے دفتری کارانی لسٹا چارغا اث کہ چیڑاسی آ آف ئے گلاس میز سرا ایر کثو، امجد پلواچوں سوالیغا ڈولا چھارثہ۔ امجد دہ سرپث بیثہ کہ اے مڑا کارے است۔ ۔۔پھول کثئی، ’’چے مسلہ ایں‘تھو چے آ پریشان ئے ؟‘‘ چیڑاسی آ گوں باز ادب ولحاظا گوئشتہ واجہ تئی آئیغا شے پھیشا ، پیریں زالے گوں ...

Read More »

جِیرے کالے کا دُکھ ۔۔۔ محمدجمیل اختر

یوں تو وہ اچھا تھا لیکن اْس کے چہرے پہ دائیں جانب ایک سیاہ داغ تھا بالکل سیاہ جیسے کسی نے کالے پینٹ سے ایک دائرہ بنا دیا ہو۔ بچپن میں وہ اس داغ پر ہاتھ رکھ کر بات کرتا تھا تاکہ کسی کو اْس کا داغ نہ دکھائی دے لیکن معلوم نہیں کیسے لوگوں کو وہ داغ دکھائی دے ...

Read More »