Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2017 » June

Monthly Archives: June 2017

کونے کا پتھر  ۔۔۔ ثبینہ رفعت

گہنے ، لتے ، رنگ ، پازیبیں نا محرم ہیں موسم ، جھولے ، ساون بادل ؟ میری آنکھیں خاک زدہ ہیں !۔ عیدیں ، ذائقے ، قلم کتابیں؟ بھٹے کے شعلوں میں جل گئیں اینٹوں کے سنگ کمر گھسیٹے میری پُشت ہی گارا ہوگئی گاڑی والی بیگم صاحبہ چُوڑیاں ، بالی ، مہندی ،جوڑے واپس لے لو نئی مے ...

Read More »

واب دز گیر نہ بنت  ۔۔۔۔ وہاب شوہاز

واب دزگیر نہ بنت واب گٹگیر نہ بنت واب آزاتی و واب وت وا جہی واب وت واکی ئے اوست ئے گنجیں چراگ واب باندات ئے وشیں مرادانی باگ واب مثلِ سُہیلا سباہاں تُرپنت واب چو روچ ئے برانزاں تواناہ بنت واب چو ماہکاناشپاں روک بنت *********** واب کہ دیستگ انت گوں پچیں دیدگاں مردماں واب کہ ماسگاں بستگ انت ...

Read More »

اواے حاطرا کہ مہر مِڑی ۔۔۔ پبلو نر و دا / شان گل

او پچیکہ مہر مڑی نہ چھڑووثی شوشوخیں کشا را نی اندرا بلکہ مڑدو ز ا لا نی دفا نی اندرا دِہ مں دگہ ہما نہا نی پلو ہ براں جِہاں آں کہ منی ڈو بر وتئی وژبوءَ نیا ما وثی سازشی ایں منصوبہ گھسّوڑغاباڑ اینت منی بارہااو منی بیلی آں تراشما نہیا زیات ہچ گوئشتہ نہ خننت آں کہ مں ...

Read More »

قطعات ۔۔۔ کاوش عباسی

دل میں کُچھ جُزخون دل باقی نہیں زندگی نے اپنے اپنے معنی کھودیئے غم ترے کوچاہیے تھاایک دشت ہم نے اپنے دل میں کانٹے بودیئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کھٹک نہ زعم نہ وحشت نہ کچھ شعورِ وجود میں مبتلا ہوں فقط حفظ جاں کی کاہش میں پٹخ رہے ہیں ادھر سے اُدھر مجھے حالات میں آدمی نہیں پتھر ہوں دستِ گردش میں

Read More »

سپین میرے دل میں ۔۔۔ ترجمہ :شان گل

جب تیری آگ برساتی تلوار ظالم فوجیوں‘ لشکر گاہوں اور بددیانت کلیساؤں کے سروں پر پڑی ہر طرف سناٹا تھا البتہ صبح کی سفیدی کچھ کچھ کہہ رہی تھی تیرے پرچم کے علاوہ سب کچھ سرنگوں تھا اور تیرے مسکراتے لبوں پر خون کے قطرے فخر کررہے تھے خون کے قطروں کو یہ فخر تھا کہ وہ مدافعت میں بہہ ...

Read More »

رشتہ  ۔۔۔۔ وہاب شوہاز

نہ تو نے مجھ کو۔۔۔۔۔۔ کبھی محبت بھری نگاہوں سے آکے دیکھا نہ بات کی ناکبھی میری راہگزر میں آئے تو کیوں تیرے بن جہان سُو نالگے مجھ کو قرار دل کا بچھڑ گیا ہے میرا تیرے سنگ دوریوں میں یہ ایک رشتہ عجیب سا ہے

Read More »

توازن ۔۔۔ ثبینہ رفعت

یوں لگتا ہے اس کے نگر میں سننے اور سنانے کی رسم نہیں حرف کہاں ہیں مہکے مہکے بھیگے بھیگے دل کے تار کو چھیڑنے والے؟ اور یہاں تو لفظ ہی لفظ ہیں روح تک کو مہکانے والے پیار کا مینہ برسانے والے جذبوں کو جاں دینے والے کیا تم اب بھی تہی دامان ہو؟

Read More »

شبیر عومر

چیا تو نشتگ ئے نال ئے مساپر کیا پرواکئی حال ئے مساپر منی کسہ شلیت گوں چم ئے ارساں مکن جستا آجنجال ئے مساپر دوئیں چماں کناں زرد ئے تہا کل سپر دراجیں اے دیوال ئے مساپر نہ ایں عشق ئے سپر کیف ئے گلاس ئے میا نوکا بزیں جال ئے مساپر مدام نشتہ تئی ناما نبشتہ کن نزانتیں شعر ...

Read More »

غزل ۔۔۔ فرزانہ رفیق

کنا اُستے کنا لاڈی درینے کنے قیدی تینا زلفا کرینے انتئے ظالم کنا اُستے پرغیا دونو ظلم کنتو انتے نی کیسا اخس کیوا اِی نیتون مہر زیبا کنا حالے ھرسینگ کِن برتبیبا دا خوشی تے کروٹ انت جانی برک کنے آمرے نا مہربانی کنے کُھل پارا دا ارے گنوکس اِی تواریٹ نا غم تا خلوکس

Read More »