Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2017 » February (page 2)

Monthly Archives: February 2017

نِیں شاعری ئے وخت چی نَیں ۔۔۔ وپٹساروف ؍ شان گل

نِیں اے شاعری وخت چنّیں نَیں کہ موسمیں شیرانی چو کہ ٹہکو ای ٹلینگھاٹاں زرہ بکتر کِلّی چہ شیرا پہ زیندغیں دلے قبضہ کنغا؟ لکھغ ترا تکّائی معلوم بی شیرانی ہندا بمب ترکّغایاں بڑ زاآزمانا راکٹ برانزنت شہرہ اندرا آس ما نا تکی ایں کیث یک خاموشی اے، اغدّہ تہ لکھئے بلے ہچ نرمیں ٹپہ ائے نہ ٹاھی بیگھئی ایں ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ معید مرزا

نوکری ڈھونڈنے ادھار لے کے چلا تو جاؤں میں باتیں کریں گے سارے لوگ بوجھ پڑے گا بھائی پر گاؤں کے لوگ آج بھی اس کو امیری کہتے ہیں کھانا الگ چٹائی پر۔۔۔ پڑھنا الگ چٹائی پر آب و ہوا کے آر پار ، خوف و خلا کے درمیاں زندگی اور موت بھی جا کے رکی ہیں کھائی پر اس ...

Read More »

غزل ۔۔۔ تمثیل حفصہ

آواز آرہی ہے چڑیوں کی میرے گھر میں سرگم سجا رہی ہے گیتوں کی میرے گھر میں ہنستی ہوئی یہ آنکھیں پھیلی ہوئی یہ بانہیں ہر یالی لا رہی ہے پیڑوں کی میرے گھر میں جینا یہاں تھا مشکل مرنا کہاں تھا مشکل اک انتہا رہی ہے چیخوں کی میرے گھر میں بارش یہاں بھی ہوگی رنجش دھواں بھی ہوگی ...

Read More »

اے چونین دورے ۔۔۔ لطیف الملک بادینی

مردم چہ مر دم گریا شُتگنت وتی رسم و د ستوران اِشتگنت اے چونین دور و زمانے ہر چیز تالان و پرشتگنت نیست کسا کس کس ئے پرواہ براث و عزیزان دلا برتگنت ھمادا ورنت چہ ھمودا زار گرنت کرارین دلانی تہا آسے لگیننت کس پہ کس ئے د یمرئیا وش نہ اِنت آہانی ر اہئے سرا کڈ ئے جتگنت ...

Read More »

غزل ۔۔۔ خمار میرزادہ

ہو کے آئینہ مقابل بھی رہا رد , کہ نہیں درمیاں آج بھی ہے ہجر کی سرحد کہ نہیں دلبرا..! یونہی نہ تھی کفر پرستی دل کی فتنہء صبحِ قیامت ہے ترا قد کہ نہیں ہاں بتا , وہم سے کترائے ہوئے حسنِ یقیں۔۔۔! ننگِ تحقیق ہوئی رسمِ اب و جد کہ نہیں دل سے اس رشکِ چراغِ حرم و ...

Read More »

دِیدار ۔۔۔ ٹیس ڈیل ؍ کاوش عباسی

سٹریفن نے بہار میں چُوما مُجھے روبن نے خِزاں میں چُوما کولن نے مگر بَس دیکھا مُجھے اَور ہر گز ، کبھی، نہ چُوما سٹریفن کا بوسہ کھویا گیا تفریح میں روبن کا کھویا کھیل تماشے میں لیکن کولن کی آنکھوں کا بوسہ دن رات مُجھے مسحور کیے رہتا

Read More »

غزل ۔۔۔ سید اسلم ہاشمی

ھیال ئے پشتہ گمان دست کپت ہمے منا سک گران دست کپت اے وتسریں درد گنوک انت زاناں اے درداں یکیں جوان دست کپت کناں بیا ایمانئے کار و بارا منا مرچاں قرآن دست کپت ھما کسا کہ سواس چک اِت ھما کسا چنڈے نان دست کپت منا تئی ذندا ، ذند بکش اِت سید کہ بوتہ ذیان دست کپت

Read More »

نظم ۔۔۔ بورخیس ؍انور زاہدی ؍اے آرداد

انجیلیکا ئے یاتا (انجیلیکا بورخیس ئے شش سالیگیں برازتکے ات کہ اوٹگے آ کپتگ وُُ مرتگ) ہمے کسانیں مرگا چنچو زیباہیں رپتگ انت زند چنچو نہ بیتگیں کسّہ کہ نصیبانی یاتانی میار کرت انت یا لگوشتگ وُُ کپتگ انت؟ وھدے من مراں زیباہیں گوستے مریت آھجگیں کُرمگ کہ سرپگ لوٹ ات بے راہمیں آپا کپتُ ُ مُرت استاراں چموکیں بانداتے ...

Read More »

آنکھوں کا سوداگر ۔۔۔ ایف جے فیضی

یہ کہانی مجھے میری نانی نے سْنائی تھی۔ اور اْن کے بقول اْنہوں نے یہ کہانی اپنی نانی سے سْنی تھی۔ کہانی ایک گاؤں کی ہے جو شاید اَب وجود نہیں رکھتا یا پھر اْس کی پْرانی صورت باقی نہیں رہی۔ خیر! نانی کہا کرتی تھی کہ اْس گاؤں پر کسی بدروح کا سایہ تھا۔ وہاں کے لوگ ہر قِسم ...

Read More »

گوجُکُ ۔۔۔ گوہر ملک

استت، اَستت یک مَردے او جنے۔ایشانا زھگ نیست ات۔ ہرچی کہ پیرِ او ملاّ دم و دُوت ، علاج و درمان او داروھش کُرت بے پائدہ۔یک روچے مَرد شُت او چار راھے ئے سرا و پت۔ ہر کس کہ آھت گشتے لگت دئے او بگوئز ۔ مَردم، اَسپ ،اُشتر گوک او پس او ھر سوار او پیادگ درست لگتے داتنت ...

Read More »