Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2016 » July (page 2)

Monthly Archives: July 2016

لمحہ موجود کا کرب  ۔۔۔ شمائلہ حسین

تیرگی کے لمحوں میں توڑنے جو آئے ہو تھا کبھی کہیں کوئی, سلسلہ محبت کا؟ خواب تھا تعلق کا, یا کسی تعلق کی ایک وجہ خواب تھا سلسلہ تھا خواہش کا لفظ اور معنی سا! ا مستقل سا رشتہ تھا پانیوں سے گہرا تھا روشنی کے پودے سا روح کو ضیاء دیتا اک عجیب بندھن تھا , بے وجہ طوالت ...

Read More »

غزل ۔۔۔ مندوست بگٹی

مناں مریض دلئے دوایاں تئی دستا حُذا دِے تھئی ء منی اشکُنت ۔ دُعا یاں تئی دستا اول نیا ختہ من دستا ، نہ آخری توشغ منی تہ بہریں من تُروٹاں ، نفع یا ں تئی دستا اے قوم دِ گوش کھایاں کُلیں ، تئی اومنی ٹھوکاں منی تہ دروغ انت دعویٰ، نوایاں تئی دستا تھرا تہ تُڑس ھچی نے ...

Read More »

خالی جھونپڑی ۔۔۔ وصاف باسط

بہنے لگتی ہے خنک رات کی سردی اندر جانے کیا سوچنے میں محو ہے یہ خاموشی چیختی رہتی ہیں چیخیں مری تنہائی میں خواب آنکھوں میں کہیں دور پڑے روتے ہیں اب دریچے سے کبھی چاند برستا ہی نہیں زیست تھک ہار کے لیٹی ہوئی مر جائے گی خاک چپ چاپ بکھر جائے گی اک دن مجھ میں جھونپڑی جو ...

Read More »

غزل ۔۔۔ انجیل صحیفہ

اپنی تنہائی کا احساس ڈراتا ہے مجھے ہاں مگر دور سے اک شخص بلاتا ہے مجھے جب یہ دنیا نہیں ہوتی میرے چاروں جانب نئی دنیا کے نئے رنگ دکھاتا ہے مجھے وہ میرا ہاتھ پکڑ لیتا ہے ہر مشکل میں ہر کٹھن راہ میں ٹھوکرسے بچاتا ہے مجھے پہلے یہ درد برستا ہے میری آنکھوں سے پھر یہی درد ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ شمامہ افق

ہوا کا شور یہ بتلا رہا ہے ہماری سمت دریا آ رہا ہے مجھے وہ دیکھتا ہے جس نظر سے وہی اک زاویہ تڑپا رہا ہے ابابیلوں کی منقاروں میں کنکر ہمیں یہ خواب کیا سمجھا رہا ہے جو قسمت کی لکیروں میں نہیں ہے ہمارے زائچے بنوا رہا ہے یہ آئینہ بنانے والے ہم ہیں تو آئینہ کسے دکھلا ...

Read More »

اگر تم مری دوست ہوتیں ۔۔۔ زمان ملک

اگر تم مری دوست ہوتیں تو میں تم سے کہتا وہ باتیں جو اب تک سنی ہیں نہ آئندہ سننے کا سوچا ہے تم نے . اگر تم مری دوست ہوتیں تو میں اک ستارے کو کشتی بنا کر بٹھا کر تمہیں اس میں کھیتا ہوا اس خلا کے سمندر میں لا انتہا دید کے ساحلوں تک دکھاتا وہ صورت ...

Read More »

غزل ۔۔ شبیر نازش

اپنی الگ ہی سمت میں راہیں نکال کر وہ لے گیا ہے جسم سے سانسیں نکال کر لوٹے تو یہ نہ سوچے کہ خط جھوٹ موٹ تھے مَیں رکھ چلا ہوں بام پر آنکھیں نکال کر میرے کفن کے بند نہ باندھو! ابھی مجھے ملنا ہے ایک شخص سے بانہیں نکال کر کیا ظرف ہے درخت کا، حیرت کی بات ...

Read More »

محمد رفیق مغیری

جلدی بیا تھؤمئیں دلدار گِریغاں پر تھوزارو زار دگاں تھئی آں شف روچ گندغاں حذا تھرا بیاری زیبل یار دستاں وثی گومنا دواکھں تھئی عشق ءِ استاں ما بیمار مئیں ڈولیں تھئی حُسن سرا عاشق استاں لکھ ہزار حُسن حُذا تھرا باز داثہ سُنہڑائیں است ءِ تہ سڑدار دعا منی ایں دم دم تھئی گو حُذا کنت تھئی دژمنا گار ...

Read More »