Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2015 » November (page 2)

Monthly Archives: November 2015

دستونک ۔۔۔ اے آردادؔ

کرنانی پیچ ءُ تاب کُجا کم بہ اَنت بگوش گیشیں تماہ، گیشیں دگہ گم بہ اَنت بگوش یا تانی مست ءُ موجیں زِر ءَ چم منی کپنت بندیں دریگ دراہیں پداشم بہ اَنت بگوش من اوں سروز ءَ زیراں وتی کایاں ملپد ءَ سنگت بیاینت آس ءِ گورا جم بہ اَنت بگوش او اپس سوار سھتے بدار قصّہ ءَ وتی ...

Read More »

جاناں کے نام ۔۔۔ افشین بلوچ

وینگو کی پینٹننگ دیکھی ، جیسے گزرے موسم کے سب دھندلے منظر سالوں کی دہلیز سے ہوتے آنکھوں کے گلشن میں اترے مارچ کے دن تھے ۔ چلتن پر بھی رنگ کھلے تھے۔ بادل تھے ۔ جو ہتم کی پہل بارش کا سندیسہ لائے کیمپس کی سڑکوں پہ پہروں چلتے چلتے تمھیں اچانک باداموں کے پھولوں کی اک شاخ ملی ...

Read More »

فیس بک کا موت سے رشتہ ابھی نیا ہے ۔۔۔ ثروت زہرا

موت نے کو ئے ابد سے آکے خاموشی سے ٹائم لائن پر جگہ بنا لی آئکن ۔۔۔ اپنی شکل پہ رکھے جذبوں کی تصویر بنانا بھول گئے ہیں ہند سے۔۔۔۔۔۔ لامتناہی گنتی گننے چلے گئے ہیں جلتی بجھتی تصویروں کے سب انگار ے راکھ میں ڈھل کراسسٹیٹس کو ڈھانپ چکے ہیں حرف کی دھڑکن گوندھنے والی ساری گرہیں ۔۔۔ اک ...

Read More »

غزل ۔۔۔ مبشر مہدی

اس نگر کو چھوڑ کر اک بن میں بس جائیں گے ہم ریزہ ریزہ ٹوٹ کر کیا دل کو دکھلائیں گے ہم یہ بدن ہے خاک کا ہم خاک کی تجسیم ہیں مثل شعلہ جل کے یارو راکھ بن جائیں گے ہم اس جہانِ رنگ و بو میں سہل ہے کب زندگی زیست ہے اک تیز رتھ کیسے اسے پائیں ...

Read More »

پرانی یادوں کے نام ۔۔۔ سعید گل بلوچ

کسی چھوٹے سے کمرے میں ‘ اک کائنات بسا ئی تھی ۔ خوابوں سے سجائی تھی ‘ وہیں کونے میں کتابوں کی الماریوں میں ‘ کسی شیلف پر مستقبل کی آس کو سنبھالے رکھا تھا ‘ مسکراہٹوں کی مہک تھی ‘ وہیں فلسفے و سائنس کی دوربین اور خوردبین بھی رکھی تھی ‘ اس کمرے کے پرانے سے کارپٹ پہ ...

Read More »

ذوالفقار گاڈھی

ماں گُشگاں تودئے مئیں لو گوش دئے چو نا مئیں چا روز روزا دوش دئے گوش دئے ماں یکی آں زندگی ائے دشت چا بیا کہ دئے تو دست مئیں کہ دست چا بیا منا تو روش، دوسئے روش دئے گوش دئے ماں تئیں ’’حانی‘‘ تو کہ مئیں ئے شہہ مرید مں پھریں نا آزمائش جا مزید اے ڈُکھی را، ...

Read More »

غزل ۔۔۔اکرم خاور

چند لفظوں کو ٹانک لیتا ہوں دل کے جذبوں کو ہانک لیتا ہوں بس محبت ہے مجھ کو لوگوں سے اس لئے دل میں جھانک لیتا ہوں چاہتا ہوں کہ میں بھی کچھ لکھوں جو بھی لکھتا ہوں پھانک لیتا ہوں راستوں پر جو پھول تکتا ہوں ان کو ہاتھوں میں بانک لیتا ہوں عمر کا کچھ پتا نہیں خاورؔ ...

Read More »

حضرتِ ڈارون۔۔۔۔۔۔ مرحبا ۔۔۔ نسیم سید

حضرتِ ڈارون! مرحبا! اصل کیا ہے ہمارا۔۔۔۔۔۔ یہ اطراف پھیلے ہوئے مناظر کی وحشت نے سمجھا دیا!! پوششِ آدمیت میں خود کو لپیٹے چھپائے ہوئے مالکِ ارض نے اپنا ظاہر ۔۔۔۔۔۔ ہزاروں طرح سے سجا تو لیا عقل و دانش کو اپنا مجاور بنا تو لیا اصل کو اپنے لیکن سدھا نہ سکا اس کا کل اس میں زندہ رہا ...

Read More »

بدی نا نقاب ۔۔۔ بریخت/افضل مراد

کنا دیوال آجا پانی نمونہ سینا اسہ پینٹنگ ئس ٹنگو کے بدی نا دیو تا نا نقاب ہرادے کہ خیسُن نا تار تیٹ جوڑ کننگانے ۔۔۔ ای بھاز ہمدردی اٹ اوڑا ہراٹ او نا پیشانی آ پاش انگا رغ آک دا ظاہر کریرہ کہ شیطان مننگ اخہ در عذاب او تکلیف نا کاریم اسہ

Read More »