Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2015 » October

Monthly Archives: October 2015

اعمال نامہ ۔۔۔ نور محمد شیخ

ہر ایک فرد عورت و مرد اپنے کردار کے حوالے سے اپنا اعمال نامہ خود ہی لکھ رہا ہے اور پھر دِمِ آخر میں دو میں سے کوئی ایک کتاب طبع ہوکر عالِم آشکار ہوگی!؟ یہ، یا تو کتابِ عزّت ہوگی! یا، کتابِ ذلّت!

Read More »

پردہ گرنے والا ہے ۔۔۔ قندیل بدر

دھواں اٹھنے لگا ہے گنبدوں سے جلائی جارہی ہیں پاک روحیں مساجد کے درودیوار پر چھینٹے لہو کے فضا ماتم کناں ہے ہوا شوریدہ سر ہے موذن خاک کی چادر لپیٹے سورہے ہیں خدا ناراض تو کل تک نہیں تھا مگر اب رابطے سب منقطع ہیں نہ جانے کون سی سازش ہوئی ہے آسماں پر جو آدم بٹ رہے ہیں ...

Read More »

پاک ساڑا ۔۔۔ ماجد شادؔ

نام شنگیت تئی ، زبان ءَ تام دنت زرد ءَ بیچاڑیں مدام آرام دنت اوست بکشیت ناتوانیں باتن ءَ توکل ءَ دمبرتگیں اندام دنت اے جہان ءِ رنگ ءُُ دْروشم سرجمیں دائم ءَ تئی ھستی ءِ پیگام دنت ھردمان تئی نام ءِ شہدیں لذت انت کہرشانیں دیدگاں ھزّام دنت تئی ثناء پاکیں ، زبانءَ ورد بیت پُْرشتگیں لبزاناں نوکیں نام ...

Read More »

غزل ۔۔۔ مسعود صدیقی

میں داستان میں ہوں ایسے داستاں کے بغیر کہیں زمین ہو جِس طرح آسماں کے بغیر ہمارے خواب میں کیوں چل پڑا ہے تُو اس پر جو راستہ ہے ترے پاؤں کے نِشاں کے بغیر مُجھے پتا ہے کہیں کا نہ مجھ کو چھوڑے گا مگر میں رہ بھی سکوں گا نہ راز داں کے بغیر ہمارا شاخ سے گرنا ...

Read More »

نظم ۔۔۔ زہیر ارمان

دربستگاں شاراتئی من نشتگاں ودارا تئی سوچنت آس تبیں ترانگ کاینت بے توارا تئی چینچو ارزان انت زندگی مرچاں ہمے پُلّیں بازارا تئی شپ گوں چراگاں حیران انت ماہے بلیت گیوارا تئی ماہ تئی صورتیں ظہیرؔ شپ ، مہپر گبارا تئی

Read More »

غزل ۔۔۔ اکرم خاور

ابھی تک دیکھتے ہیں رہبروں کو ابھی تک تَک رہے ہیں راستوں کو وہ تقسیمِ محبت کر رہے ہیں ادھر ہم ضرب دیتے چاہتوں کو اذیت سے پریشاں ہو گئے ہیں صدائیں دے رہے ہیں راحتوں کو رقم کر کے نصابِ زندگی ہم مرتب کر رہے ہیں نسبتوں کو حسابِ عمر خاور کیا کریں ہم ابھی تک گن رہے ہیں ...

Read More »

غزل ۔۔۔ کوثر اعجاز چوہدری

جلایا ہے تو رکھ دیوار پر مجھ کو دیا ہوں طاق میں مَت قید کر مجھ کو زمانہ مجھ سے اَب نظریں چُراتا ہے کبھی اس کی ہی لگتی تھی نظر مجھ کو تو پہلے حبس کی جانب نکلتی ہوں ہوا بن کر جو کرنا ہے سفر مجھ کو اور اب مجھ پر ہوائیں راج کرتی ہیں پسند آتے نہ ...

Read More »

غزل ۔۔۔ ابراربرکت بسیمہ

موسم خزان ء گلزارے مونجا درداک او زیادہ دلدارے مونجا نن تٹ تہارا انت اس کرونک طوبے تواینو استارے مونجا جام اس کنینگ کہ ہْر داڈے اوغک تولوک ء تنیا میخوارے مونجا نے اف سما اچ دیوانہ نا دا غمتا مروکا غمخوارء مونجا ہر صوب سوچیک ہر شام سوچیک قسمت نا دوآن ابرارء مونجا

Read More »

غالب عرفا نؔ

چلتی رہیں مسا فتیں پھر بھی سفرملا نہیں جس کی تلا ش میں رہا ۔۔۔وہ تو مجھے ملا نہیں پیا سا میں ایک ہی نہیں سب لو گ نشتہ کام ہیں میر ے نو احِ شہر سے در یا کو ئی بہا نہیں رُو داد سو ہنی کی ہو یا ما روی کی داستا ں تہذیبِ حُسن و عشق کی ...

Read More »

غزل ۔۔۔ کرامت بخاری

زخم کھا کر بھی دُعا کرتے تھے ایسے بھی لوگ ہوا کرتے تھے سب کو آسانیاں دے کر پھر بھی خود وہ مُشکل میں رہا کرتے تھے ہائے وہ لوگ جو سچ کی خاطر جھوٹ کو جھوٹ کہا کرتے تھے ہاں وہی چاک گریباں والے ہاں وہی لوگ وفا کرتے تھے اب تو ہر شخص ولی ہے شاید ہم تو ...

Read More »