Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2015 » June (page 3)

Monthly Archives: June 2015

یلیں بچ ۔۔۔ ڈاکٹر علی دوست بلوچ

سرو دیمپان ڈیھئے مے یلیں بچ مڑاہ وشان ڈیھئے مے یلیں بچ رمگ اوستانی رُنگ راہاں نہ بیت ویل کہ است آں شوان ڈیھئے مے یلیں بچ اگاں لوٹے، کہ رُژنا سر ببئے تو سبقا بوان ڈیھئے مے یلیں بچ دلئے ہوناں گوں رودیننت نہالاں ہمے دہقان ڈیھئے مے یلیں بچ ہمک نیما تئی نامئے جلشکیں توار و زوان ڈیھئے ...

Read More »

غزل ۔۔۔ انس ساچان

ہزار اپسوز ، ہزار ارمان گمیگاں پہ ترا ماہکان نز انتگ من کہ دُرد انگ دل ءِ و اہگ بیاں ارجان کُجاں آ پیشی نندو نیا دا بلوچی مجلس و دیوان مروچاں پہک ءَ بیمنا کیں منی دہر ئے ہمک اِنسان نلو ٹاں زند ئے وشّی یاں پہ من گنجے منی پیشکان نہ سگیت تژن و تیہاراں گشیت دائم ترا ...

Read More »

کاش ۔۔۔ کاوِش عبّاسی

(خونریز ، مُسلّح اِنتہا پسند سے ایک بات) مُحبّت سے بھی تُم نے نفرت ہی سِیکھی ترقّی سے سِیکھی خرابی تھیں آنکھیں بھی ، مستک بھی آگے تمہاری تھے پاؤں بھی آگے تھے رَستے سب آگے تمنّا کے اور زِندگی کے سبھی شہر گاؤں بھی آگے مگر تم تو بس خود میں بند ایک اُلٹے ، مبارز جنوں میں تھے ...

Read More »

دستونک ۔۔۔ جابر کریم

دردے مہرانی جہانا سوچیت ار سے بچکندئے نوانا سوچیت پہ ہوسا تئی بار گیرانی کئے وتی جند ئے گِدانا سوچیت یک حیالے یک ترانگے یک غمے زرد اہر سہت و دمانا سوچیت بیا ندارہ بکن دمانے کہ چون چراگے وتی بانا سوچیت شہدیں مہر ئے مکتبانی سبک مرچاں ’’ امروز ‘‘ ئے زبانا سوچیت جابر اے اَہد چینچو ارزانا زند ...

Read More »

غزل ۔۔۔ بیرم غو ری

دنوں پر دن گزرنے کے لیے ہیں بہت کم تم سے ملنے کے لیے ہیں یہ منظر روز و شب جو دیکھتے و یہ منظر سب بدلنے کے لیے ہیں لکھے ہیں لو ح آ بِ آرزو پر ہما رے نا م مٹنے کے لیے ہیں یہی اک آدھ مو سم کی ہے مہلت یہ سو کھے پٹر جلنے کے ...

Read More »

غزل ۔۔۔ اکرم خاورؔ

زخمِ دل کیونکر دکھاوں اور شکایت کیا کروں اپنی حالت دیکھ کراس کی حمایت کیا کروں جانتا ہوں ایک سورج سائباں بننے کو ہے اے مرے دل مجھ پہ ہو ایسی عنایت کیا کروں اس کی آنکھوں میں حیا ہے میری آنکھوں پر نقاب اے خدا میں اپنی آنکھوں سے رعایت کیا کروں جو سمجھتا ہی نہیں مجھ کو نا ...

Read More »

غزل ۔۔۔ عمر برناوی

بچھڑ گیا جو وہ چہرہ گلاب جیسا تھا سراپا اُس کا غزل کی کتاب جیساتھا دھنک کے رنگ تھے سب رنگ اُس کی آنکھوں کے او راس کا بولنا بجنے رباب جیسا تھا غم جہاں کے اندھیرے سمٹنے لگتے تھے سیاہ شب میں وہ اک آفتاب جیسا تھا یہ کس نے ماردیا دل کی جھیل میں کنکر جواس میں عکس ...

Read More »

یہ کس کا مکاں ہے؟؟ ۔۔۔ امان جان امان

(اُستاد عبدالباسط شیخی کے نام) یہ کس کا مکاں ہے کہ میں آچکا ہوں؟ چند پینٹگز ، کلر اور بُرش ہیں یہاں کچھ نا مکمل خائشیں ٹانگی ہوئی ہیں یک کُنج میں اور مغرب کی جانب یک کھڑکی کُھلی ہے کھڑکی کے باجُو میں آویزاں ہے یک سُندر گھوڑے کی تصویر تصویر کے نیچے لکھی ہیں کچھ دھندلے حروف جو ...

Read More »

سبین محمود صاحبہ کے نام ۔۔۔ شبیر شاکر

سبین محمود ہم کیا کریں؟؟؟ بس ’’ آہ‘‘ جو دل سے نکلتی ہے سبیّن! سیاہ پٹیاں باندھنے کے بعد یہاں صرف نام کی کمیٹیاں ہیں بس! جو سرد خانوں میں محفوظ ہونگی جن کی چابیاں گرم جیب والوں کے پاس ہیں مہناز کی لختِ جگر انسانیت کی ہمدرد سفر سبین! تمہاری سوچ زندہ ہے سبین تم صباؔ ء والوں کے ...

Read More »