Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » 2014 » December (page 2)

Monthly Archives: December 2014

غالب اور عہد زر پرور ۔۔۔ بیرم غوری

اے امامُِ سخن‘ وارثِ حرف و صوت و شبیہہ فکرِفردا و امروز کے اے امیں دل مرا‘ طاقِ بازار میں رکھ کے بھولا ہوا اک کھلونا نہیں میں قلم کی حفاظت پر مامور‘ سارے فرشتوں کو سمجھا چکا فکر کی ہر بلندی سے جھانکا ہے سوئے زمیں……..تب یہ سمجھا کہیں فکر گزرے ہوئے ہر زمانے کی بس ہے خبر آنے ...

Read More »

کبھی یاد آﺅ تو اِس طرح ۔۔۔ محسن نقوی

کبھی یاد آﺅ تو اس طرح کہ لہو کی ساری تمنائیں تمہیں دھوپ دھوپ سمیٹ لیں تمہیں رنگ رنگ نکھاردیں تمہیں حرف حرف میں سوچ لیں تمہیں دیکھنے کا جو شوق ہو تو دیارِ بحر کی تیرگی کو مژہ کی نوک سے نوچ لیں کبھی یاد آﺅ تو اس طرح کہ دل و نظر میں اُتر سکو کبھی حد سے ...

Read More »

دیواریںنظموں والی ۔۔۔ محسن شکیل

شہر کی دیوار نظموں سے مزّین ہوتی تو ہمیں محبت کرنے میں کتنی آسانی رہتی آپس میں ہمارا مکالمہ بیشتر محبت کی بات پر مشتمل ہوتا ہم سب کا سارا دن محبت ہی کا لہجہ لےے رہتا رات کو خواب بھی محبت کے عکس میں ڈوبے نظر آتے لوگ جب اِس درجہ محبت کرتے تو شاعروں کو محبت کے ڈھیروں ...

Read More »

زورِ زر ۔۔۔ محمد رفیق مغیری

زر نہ بی شہ ئِ کھس نیں یار کُلاں شہ دوستیں دُنیا دار کھس غریباں براث نہ کنت تو نڑیں عالم فاضل بنت بھلّی لائق بیث بے شمار زر نہ بی شہ ئِ کھس نیں یار استیں کلدار ہر کھس تھئی ایں دوست برادر کل منی ایں اگہ ڈھیریں گوتھوا دینار دنیا سالم تھئی ایں یار کھیث گو زراخوش لِباسی ...

Read More »

کم ذات آنسو ۔۔۔ احفاظ الرحمن

( کوٹ رادھا کشن کے ننھے بھائی بہن کے غم میں، جن کے ماں باپ کو آگ میں جھونک کر ہلاک کیا گیا) اُمیدیں خون میں ڈوبی ہوئی ہیں جو روشن تھے ستارے ، جاں کنی کی ڈور میں لٹکے ہوئے ہیں دمکتی تھیں جوآنکھیں ، روتے روتے آنسوﺅں کے قحط کی تصور بن کر بُجھ رہی ہیں ہر اک ...

Read More »

یانگ سان سوچی کی رہائی کی خبر پڑھ کر ۔۔۔ فہمیدہ ریاض

ذرا دیکھو تو زندان کی دیوار پر لہلہاتے ہیں پھول قید میں تم نے کاٹے یہاں بیس سال ان کا ایک اک برس ان کا ایک اک نفس جذب ہوتا رہا اس کی دیوار میں لو، بہاروں نے ان کو کیا ہے قبول دیکھ لو آج زنداںکی دیوار پر کھلکھلاتے ہیں پھول کامرانی نے بڑھ کر تمہیں چھو لیا اور ...

Read More »

میں کہاں ہونا چاہتی ہوں ۔۔۔ فہمیدہ ریاض

ایک ٹرین میں جو تیزی سے گزرتی جائے چناروں کے گھنے جنگل سے اور سفید جھاگ اڑاتی طوفانی ندی کے پل سے لیکن میں دو جگہ ہونا چاہتی ہوں اس ٹرین میں ، اور اُس کے ساتھ ساتھ اڑتی ہوئی تاکہ میں اس پورے منظر کو دیکھ سکوں منظر میں داخل ہوکر میں بہت کم دیکھ سکی جبکہ اس ورق ...

Read More »

گوانک ۔۔۔ قاضی عبدالحمید شیرزاد

گروَت مہ وت جیڑہ کنئے کے راکثئے کئے راجنئے زار ترکہ بئے گون وت منے ہنکینانی پُر کوت شنئے دوست ئین بلوچا یک پہ کن بُست چاکری گوانکے بہ جن راجا وتی جی جی پہ کن ندر یک پرتہ سا ہ و بدن سو گندا بولانئے ورن گون خان گڑھا سیستان رون ہر ظالمئے گُٹا گرن ماسین وطن پر تہ ...

Read More »

خارانے توار سید انورے ناما ۔۔۔ ضیا شفیع

الہاں بوتا شعرے گوں سا ز انورے دوشی درائیں شپ بوتا آواز انورے ھستیں جہانا او دگہ ساز ندہ پہ توارے منی زردے واہگاں کرتگ بس ناز انورے برے شہ مرید، توکلی، ہانی و سمویں برے عزتیں دپا برے مہناز انورے گوں سنگتاں بچار ہر مر بیگا ھا گشے مارا پہ ایمنی بوتگ شوھاز انورے بدنامیا مچارے پہ وشنامی زندگیں ...

Read More »

جی آر شاری

ہر وڑی آدم ذات کنت دنیا دژمناں جوریں برات کنت دنیا ہچ نہ کنت مارا منزلئے رنگراہ مارواں دانکہ آہت کنت دنیا جندئے ہونکیں ساہ پلیت چہ من چے منا پمن دات کنت دنیا سکی ئَ کسے نہ ات منی ہمراہ ہر چی شات کنت دنیا روچے انچیں کیت من نہ باں شاری ہو! بلیں مارا یات کنت دنیا

Read More »