Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی (page 4)

شیرانی رلی

حمیرا صدف حسنی

سچ بولو گے؟۔۔۔۔ انسانوں کے بھیس میں بیٹھے وحشی کو وحشی بولو گے۔۔۔۔ کٹ جاؤ گے مر جاؤ گے دیواروں میں چنواؤ گے زندانوں میں جل جاؤ گے سچ بولو گے؟ مر جاؤ گے بیچ سڑک میں آ کر کوئی چند پیسوں کی اک گولی سے چھین کے سانسیں لے جائے گا جرم وہ کر کے بچ جائے گا اور ...

Read More »

حمید لیغاری

اژما مْریذ دْراہا شتہ ھانی دہ اِشتئی بانہڑاں میری سلِہہ گوں جابہاں رِندی تْرا لوھیں کماں ھانی گوں کونجی گڑدنا گڑتو دِہ رِنداں گؤشتغث اژما مریذ دراہا شتہ ٹَپاں وثی پاشینغث براں تلاں گوازینغث درداں چہ ایکا نارغث ھانی زھیراں گوارغث گڑتو دِہ رنداں گؤشتغث اژما مریذ دراہا شتہ مستاں گوں ریخاں جھاگغث ریڑیں گْذاں جانا کثو قولاں وثیغاں پالغث ...

Read More »

جہاں آراء تبسم

ایک یا قوتی نظم (کوئٹہ کا نوحہ) اے مرے دوست میری ایک تمنا تھی کہ میں تیری چاہت میں کوئی نظم لکھوں اک تیرے پیار کی حدت میں تپکتی ہوئی نظم جس کا ہر لفظ ہو یا قوت کا لفظ تیرے جذبات کی حدت میں سلگتا یا قوت اور یا میرے حیا رنگ لبوں سا یاقوت سرخیِ حُسن سے دہکا ...

Read More »

جمال بشیر

اے ساھگا لیلو جتگ!۔ ہر شپا درکپاں مراداں گوں دمبراں چنت برا وتی توکا گوں گمانی ھزابی آ بلکیں دانکہ ویرانیں جنگلے بئیت انت من چراگے گماں گوں روک کتیں من ہمے درچک ئے ساھگے آ بوپتیں چو ندارہ کتیں وتی پیما اے ھدا کمو زاہر ا بیتکیں تنگیں مرگے ئے ندارہا ترمپے ارسے چہ نگاہاں ریتکیں درست شمشوتیں چہ ...

Read More »

ثروت زہرا

اقلیدس ! زندگی سنو دائرہ مرکزِ یعنی مرے دل کے سنگھاسن پر براجمان “تم ” اور دائرے کے تین سو ساٹھ زاویوں پر یکساں پرکار کی طرح گھومتی ہوں میری “میں ” تکون زاویہ قائمہ پر زندگی میں کسی زندہ لمحہ میں ٹہرنے کی کوشش کرتے ہوئے میں ، تم اور وہ مستطیل میری اوڑھنی اور آس کے کونوں پر ...

Read More »

یہ دستیاب عورتیں

ثمینہ راجہ یہ بے حجاب عورتیں جنہوں نے سارے شہر کو کمالِ عشوہ وادا سے شیوہِ جفا نما سے بے قرار اور نڈھال کر رکھا تھا جانے کون چور راستوں سے کوچہِ سخن میں آکے بس گئیں کسی سے سُن رکھا تھا ۔۔۔’’یاں فضائے دل پذیر ہے ہر ایک شخص اس گلی کا ، عاشقِ نگاہِ دلبری معاملاتِ شوق وحسن ...

Read More »

ثبینہ رفت

چاروں اَور خوشی کی چُنری دسترخوان سجا رہتا ہے بادل بھی اب دوست ہوئے ہیں رستے بھی دشوار نہیں لیکن چُبھتا رہتا ہے دل میں گڑھا مسلسل تیرے ہجر کا کانٹا !!!۔ نبض شناس اوپر لاکھوں پھول کھلے تھے اور وادی میں گھپ اندھیرا اب کے اس کو بام پہ لانا کاروبار تھا گھاٹے کا رہائی کی نظم عنبر بیچ ...

Read More »

ثاقب ندیم 

جاگنا نہیں ابھی  یہ ابتدا ہے ابتدا ہے تیرے میرے خواب کی کہ ابتدا میں انتہا ہے اور یہ جو درمیاں ہے درمیاں سے وا نہیں ہوا ابھی میں ابتدا سے درمیاں میں مضطرب ہوں مضطرب ہوں ہوش میں میں مضطرب ہوں خواب میں یہ خواب ہے ، یہیں رکا رہے تو کیا جہاں خیال مل رہے ہیں عین اْس ...

Read More »

تمثیل حفصہ

چھپکی  سنو نظم اپنی کو تکیہ کیا ہے کہ بستر پہ لیٹے خودی کو لپیٹے خیالی جمودوں کے اس قافلے میں تمھاری ہی باتیں کیے جا رہے ہیں جنوں میں، ہواؤں، فضاؤں کے گہرے دھویں میں نظر بانجھ ٹھہری کہ دستک بھی کانوں سے کب سن رہے ہو مگر اندھی آنکھوں کو کوئی دکھائے جسے تم نے کھوجا نہیں آج ...

Read More »

تاج بلوچ

سَرِشت دلئے دیار، چہ تلکار ترْمبگاں پیسر ہزار واب، سَداں چاڑ آبِداں بوتہ۔ ماں زاپراں تَبیں اومانئے ساہگئے مِیسّا و روتہ درَنزیں بہارانی وشبوئے مینا، دماناں شَنزِتہ، تاں اْمر میزراں بوتہ۔ ہما دمان، کہ وابانی مولمئے ساچاں سْبک سْبکا دلئے ہاکئے ہر شَم و درگا خْمار نَمب کنان کرتگ و گوپاں کتگ اَنت تاں مْدّتیا رگ و ریشّگاں بہار کتہ، ...

Read More »