Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی (page 30)

شیرانی رلی

بلقیس خان

بلقیس خان کی 5 غزلیں لگا کے نقب کسی روز مار سکتے ہیں پرانے دوست نیا روپ دھار سکتے ہیں ہم اپنے لفظوں میں صورت گری کے ماہرہیں کسی بھی ذہن میں منظر اتار سکتے ہیں بضد نہ ہو کہ تری پیروی ضروری ہے ہم اپنے آپ کو بہتر سدھار سکتے ہیں وہ ایک لمحہ کہ جس میں ملے تھے ...

Read More »

غنی الرحمن انجم 

جو روشن ہے وہی دکھتا نہیں ہے ہمارے ساتھ کیا ایسا نہیں ہے جو دنیا کیلئے راہ ہدایت اسے اب تک کوئی سمجھا نہیں ہے مسلسل تیرگی بڑھنے لگی ہے کہیں بھی راستہ ملتا نہیں ہے سراپہ آئینہ ہو ذات جسکی مقابل آئینہ رکھتا نہیں ہے نجانے کیوں تعجب ہو رہا ہے وہ جیسا تھا کبھی ، ویسا نہیں ہے ...

Read More »

رضوان فاخر

یاد کے شہرِ بے نشان سے دور دھوپ نکلی ہے خاکدان سے دور وہ ستارا عیاں ہوا لیکن پر ہوا میرے آسمان سے دور تیرے پروانے جل بجھے شب بھر شمع سے دور شمعدان سے دور پھول اور تتلیاں رہیں میرے واہموں سے بھرے مکان سے دور تجھ کو اک پھول دینے آیا ہوں جو کھلا تھا تِرے گمان سے ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ احمد وقاص

مجھے خواب کا روگ لگا بھائی کوئی ہے کیا اس کی دوا بھائی میری آنکھ کو چھو لے اشک اگر ہو جاتا ہے صحرا بھائی میں بنجر ہوتا جاتا ہوں کوئی اچھا شعر سنا بھائی اب مجھ سے اس کا ذکر نہ کر میں تیاگ چکا دنیا بھائی باہر تاریکی رہنے دے مرے اندر دیپ جلا بھائی

Read More »

ھو  ۔۔۔ تمثیل حفصہ

سن مست قلندر جوگی قیس ہے چولہ نیلا سرخ سفید بالوں میں کنکر رات دوپہر اک آیت لوری ذکر سپہر دو چکر کاٹے سورج دہر بس شمع روشن، نور ہی نور اک دھند بگولہ باجے صور میت پہ رونا چیخوں چور آوازیں کسنا دورم دور فریادیں کرنا ہاؤہو اک حق اللہ ہو، اللہ ھو اک حق اللہ ہو، اللہ ھو۔۔۔

Read More »

غزل ۔۔۔ وہاب شوہاز

دعاوں میں کبھی دیکھیں اثر کہاں تک ہے پلٹ کے آئی صدا بے خبر کہاں تک ہے اک عمر ہو گئی خود کی تپش سے دور ہوئے تمہاری زلف کا سایہ مگر کہاں تک ہے کبھی تو زخم جگر پھر سے جاں کو آئے گا سفرمیں ساتھ میرے چارہ گرکہاں تک ہے یہ کائنات تو صحرائے بیکراں ہے مگر میں ...

Read More »

غزل ۔۔۔ قندیل بدر 

نور سے بنی ہوں میں نور میں ڈھلی ہوں میں دن میں جیسے ہوں سورج شب کو چاندنی ہوں میں چپ رہوں تو بادل ہوں ،رو پڑوں تو بارش ہوں گر پڑوں تو موتی ہوں سیپ میں چھپی ہوں میں جیسے میرا سایہ ہے ،پر کوئی پرایا ہے کون ہے وہ کیسا ہے سوچنے لگی ہوں میں تھی کلی بہاروں ...

Read More »