Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی (page 3)

شیرانی رلی

بھیا کے لیے اک نظم ۔۔۔ سلیم شہزاد

( بھیّا رے بھیّا ) سوچ میں مت پڑ بات اتنی ہے آبلے ہوں گے او رے بھیّا دکھ ہیں زیادہ نسبت سکھ ہوتے ہیں کم تارا رم پم پم کیا ہو جاتا شاید کچھ بہتر ہو جاتا ویسے بھی تو یہ دو آنکھیں ڈھونڈ رہی تھیں جانے کس کو خواب میں کھو جانے سے پہلے دیپ بجھا دو ’’ ...

Read More »

غزل ۔۔۔ جمال بشیر

کپتگیں ماہے ئے گبار ا انت دل کجام ساھت ئے ودارا ئیں شم نہ انت ترانگانی دروازگ دل چنیں دردے ئے حصارا ئیں چہ ہما پرشتگیں دریگاچے کسے اوشتاتگ وتوارا ئیں مئے ابیتکی ئے سبزیں دریا آ مالم ئے چولے ئے بھارا ئیں بیا بچار تسبیحاں زھیرانی شپ تئی ترانگاں شمارا ئیں

Read More »

Childhood Romances —- Ramsha Ashraf

It must have been unusual for some the way loneliness enchants back, on a not-so-dark cozy winter night, while the others sit around the fire & recall the brief childhood romances they have had with the balcony-drizzle, radio melodies, garden-symmetries, steaming-hot-cups of mum-made-tea, warm hands of the old infatuations and, those light, nonexistent moments of ecstasy before one could fall ...

Read More »

کائنات۔۔۔۔۔ ظہورا زظہور از ظہور  ۔۔۔ ثروت زہرا

اک طرف گالیاں نعرہ بازیاں لاٹھیاں اور اذدہام امریکہ مردہ باد۔۔۔۔ گستاخان فلاں ابن فلاں کو پھانسی دو اک طرف اور تمھاری تلاش میں نکلتا ہوا مرا دم اک طرف خون سے بھیگتی ہوئی ٹھنڈی اکیلی سڑک۔۔۔۔ اس طرف ذائقوں میں بھیگتی ہوئی میری بنجر روح اک طرف شعلوں کی لپیٹوں میں چھپن چھپائی کھیلتے ہوئے برج اور مینار۔۔۔۔ اور ...

Read More »

قبرستان کے وسط میں لکھی نظم ۔۔۔ سلیم شہزاد

رنگ سفر میں رہتے ہیں اور خوشبو کے سنگ، تتلی بن کر اُڑتے اُڑتے کھوجاتے ہیں شاید مٹی ہوجاتے ہیں اورپھر اک دن! بھیس بدل کر آجاتے ہیں خوابوں میں یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ خواب اگر مٹی ہوجائیں آنکھیں پتھر ہوجاتی ہیں پتھر تو بھاری ہوتے ہیں کتنے بوجھ اٹھائیں گی یہ پلکیں آخر بوجھل بوجھل سی رہتی ...

Read More »

وصاف باسط

کبھی کبھی ہے وہ اکثر نہیں ہے میرے پاس بلا کا خوف ہے اور ڈر نہیں ہے میرے پاس تمہارے پاس تو اک دل ہے اس میں رہ لوگے میں اک مکان ہوں اور گھر نہیں ہے میرے پاس میں چل سکوں گا جو بیساکھیاں ملیں مجھ کو میں اڑ سکوں گا مگر پر نہیں ہے میرے پاس زمیں سے ...

Read More »

غزل  ۔۔۔ تمثیل حفصہ

بھاگی بھاگی، صحرا صحرا، آہ آہ قطرہ قطرہ، دریا دریا، چاہ چاہ پھر سفر لاگا مجھے یہ عشق کا مٹی مٹی، گیلی گیلی، راہ راہ تو نے مجھ سے کیوں چھپایا راز یہ پانی پانی، ڈوبی ڈوبی، ساہ ساہ نظم تیری چَھپ گئی اخبار میں نقطہ نقطہ، مصرع مصرع، واہ واہ رادھا تیرے پیار میں میرا ہوئی قصہ قصہ، آنسو ...

Read More »