Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » قصہ (page 10)

قصہ

آدم خان ۔۔۔ ظفرمعراج

آدم خان نے جب مسجد بنانے کا ارادہ ظاہر کیا تو مولوی غلام نبی نے اس کا بھرپور خیر مقدم کیا ۔ مگر علاقے میں دوسری مسجد کا سنگ بنیاد اتنی دوری پہ رکھا جہاں پہلی مسجد کی آذان کی آواز گم ہوجاتی تھی ۔ بقول اس کے ، یہاں شہر کا ماحول نہیں ہونا چاہیے۔ اور آدم خان بھی ...

Read More »

منی چپلانی درد ۔۔۔ ڈاکٹر سمی پروازؔ

’’راشنئے گِر گا دُرستیں زر لکُ و تُرک بوت انت، چو ں کنیں دیمے ماہا الم ءَ تئی واستہ من چپل گداں ‘‘ ہر رندے وڈا منی جندا چہ پیسر منی ابا ءَ گوں من گشنت۔ ’’ ہو ابا شرّ۔۔۔۔۔۔‘‘ منی دپا چہ دراتک ۔من دیست منی ابائے چمانی توکا گُشے گریبی و تنگدستی ءِ تہاری آ یک دگے بے ...

Read More »

ننگا آسمان ۔۔۔ شیام جے / ننگر چنا

چرچ گیٹ کی طرف جانے والی لوکل ٹرین۔ راستہ کے قریب، مسافروں کی روزمرہ کی بھنبھناہٹ بند کرادینے والی چیخ۔ ” پک۔ پاکٹ!”۔۔۔ اور شور کا بڑھ جانا۔ اس گاڑی میں روزانہ سفر کرنے والے مسافروں کو پتہ تھا کہ دودن پہلے کسی غریب کلرک نے اپنا بٹوا نکلوایا تھا۔ بیٹھے ، کھڑے ہوگئے ، کھڑے ہوؤں نے ایڑیاں اوپر ...

Read More »

WHEN THE EARTH OPENED ITS LAST WRATH —-  Fakhar Zaman

    The days were very cold. The sun had disappeared and had touched the equinox of winters. The people at this planet didn’t know about the past. As the sun had passed from the equinox of Ram and Aquarius, the people had forgotten everything. The past had buried in past. They only had an idea that they had been brought ...

Read More »

گھرلُٹ جانا ۔۔۔ یار محمد چانڈیہ/ ننگر چنا

پورے گاؤں میں افراتفری مچ گئی۔ ’’ آدمی تو بڑا سُورما تھا، اُس کی غیرت اچانک کیوں نودوگیارہ ہوگئی !‘‘ ’’ کون کہتا ہے کہ سُورما اور نرکابچہ تھا …. شروع سے ہی ایسا بے غیرت تھا ….! بچپن سے ہی ہجوموں کا لونڈاتھا۔ بڑا ہواتوتیس مار خاں بن گیا ….!!‘‘ ’’ پتہ نہیں اُس میں یہ غیرت کیسے پیداہوئی ...

Read More »

لی شوئی کی گلیوں میں ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی ۔ نیو زی لینڈ

لی شوئی کی گلی کے آخری سرے پر اس کٹیا نما مکان میں کوئلے کی پرانی انگیٹھی سے دھواں لہراتا ہوا ٹوٹے دروازے کی درزوں سے نکل کر باہر آرہا تھا۔ خاموشی سے اپنے لکڑی کے تختوں سے بنے پلنگ نما تخت پرلیٹے ہوئے لیو ڑینگ نے سوچا ” مارچ ختم ہونے کو آیا، لیکن سردی کم ہونے کا نام ...

Read More »

کرشمہ سازی ۔۔۔ مریم جہانگیر

میرے چہرے پہ زندگی نے اتنے تھپڑ مارے ہیں کہ اگر میں سالہا سال آئینے میں اپنا عکس کھوجتی رہوں تب بھی اپنی اصل شکل دیکھ نہیں سکتی ۔ وہ شکل جو میں نے شیرخوارگی میں خد و خال میں مختلف تبدیلیوں کے بعد آخر کار اپنائی تھی ۔ اب اس شکل پہ بھی صدیوں کی مسافت کے اثرات نظر ...

Read More »

روشنی ۔۔۔ ڈاکٹر عقیلہ بشیر

دیکھو! دیکھو! وہ سورج کی آخری کرن بھی پہاڑ کے پیچھے چھپ گئی ’ٹونی‘ نے اپنی پونی ٹیل ہلاتے ہوئے اور چپڑ چپڑ چیونگم چباتے ہوئے ’فری‘ سے کہا اور گھر جانے سے پہلے آخری نظر یوکلپٹس کے درخت پر ڈالی۔ خوبصورت سفید تنے اور چمکیلے پتوں والا یہ درخت ہمیشہ کی طرح اُسے خدا حافظ کہتا ہوا محسوس ہوا۔ ...

Read More »

روباہ ۔۔۔ گراز یا ڈیلیڈا / مسرور شاد

مئی ءِ گرم و دراجیں روچ ات انت و انکل ٹامس یک رندے پدا گوستگیں سالانی ۔۔۔۔۔۔ دہ سال ساری ءِ وڑا وتی گس ءِ دیم ءِ پچیں جاگہا نِشت ات۔ آنہی لوغ کوھہ بُن ءِ سیاہیں گسانی رد ءِ گڈی گس ات۔ بہارگاہا چونا وتی دلبریں شررنگی تالان کرت ات۔ آنزوریں پیر مرد کہ وتی سیاہیں کچک وزردیں پشی ...

Read More »

گدھ ۔۔۔ کائنات آرزو

سڑک کے اس پار بہت سی دکانیں تھیں ۔ سبزی اور پھل کی ریڑھیاں بھی دونوں اطراف سجالی گئی تھیں۔ ابھی ساری دکانیں کھلنی شروع ہوئی تھیں ۔ یہاں کے لوگ راتوں کو دیرتک جاگنے اور دن کو دیر سے اُٹھنے کے عادی تھے۔ اس لیے دس گیارہ بجے ہی دکانیں کھلنی شروع ہوجاتیں۔ دکانوں کے شٹر وں کے کھلنے ...

Read More »