Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » قصہ

قصہ

نوجوان اطالیہ ۔۔۔ میکسم گورکی/پروین کلو

رات مخملی پوشاک میں ملبوس، ملائم ملائم قدموں سے مرغزار سے شہر کی طرف آرہی ہے اور شہر لاکھوں سنہری روشنیوں کے ساتھ اس کا سواگت کرتا ہے۔ دوعورتیں اور ایک نوجوان کھیتوں سے گزر رہے ہیں گویا وہ بھی رات کا استقبال کر رہے ہوں اور ان کے پیچھے دن بھر کی محنت کے بعد آرام کی تیاری کرتے ...

Read More »

درگاہ ۔۔۔ راشدہ قاضی 

ُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُٓٓٓ ُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُُاُس رات ’ہوا کیا تھا؟ کِس رات؟ سب کہتے ہیں کہ شہبا ز والی شیر یں کِسی سَے ملنے گئی تھی۔ یا ر خود سو چو کہ اگر وہ شہبا ز والی شیر یں تھی تو پھر ملنے بھی شہباز کو گئی ہو گی۔ اس بات کو 30سال بیت گئے۔مگر آج تک یہ گتھی نہیں سلجھی اُس رات آخر ...

Read More »

عئید پہ مئے رستگیں قد اَ کسان انت ۔۔۔ نور بلیدئی

عیدئے پرمڑاھیں صحب ات۔منا پیالہ ئے چاہ دستا ات او موسم ئے دلکشی آ گوں مشکول اتاں۔آزمان ئے سیاہ او بزیں جمبراں سرجمیں ھلک تامور کتگ ات۔جمبر کمے کمے مور شنزگا اتنت۔ عید ئے  اے پرلزتیں وشی ئے ساھت و موسم ئے پرکیفی آ ابید ھم گشے یک بے چاڈی او ملوری یے  مارگ بوھگا ات۔۔۔۔۔ مئے لوگانی کر و ...

Read More »

چوکور دائرے ۔۔۔ حنا جمشید

جس وقت اُس نے دیوار پھلانگی، تو اُس سڑک پر تاریکی کے ساتھ ساتھ ہو کا عالم تھا،جس پر ابھی کچھ دیر قبل، وہ اپنی پوری قوت جمع کر کے سر پٹ دوڑ رہا تھا،باوجود اس کے کہ اس کی ایک ٹانگ کسی سخت چیز کی شدید ضرب سے زخمی ہو چکی تھی۔ گوعام حالات میں دوڑنا تو کجا،  چلنا ...

Read More »

 آنٹی لوسی ۔۔۔ مصباح نوید

دروازے پر لگی برقی گھنٹی لگاتا ر بج رہی تھی۔گھنٹی بجانے والی، گھنٹی کی آواز کوناکافی جانتے ہوئے ہر بار بٹن پر انگلی کے دباؤ کے ساتھ ”باجی“کی صدا بھی بلند کرتی۔ میں نے بڑ بڑ اتے ہوئے ہاتھ میں پکڑی کتاب میز پر پٹخی۔بیلوں اور گملوں میں لگے پودوں سے سرسبز برامد ے میں رکھے تخت پر گاؤ تکیے ...

Read More »

حادثہ ۔۔۔ لوہسون/شاہ محمد مری

مجھے دیہات سے دارالحکومت آئے چھ برس ہو چکے  ہیں۔ اس دوران میں نے نام نہاد ریاستی معاملات کے بارے میں بہت کچھ دیکھا اور بہت کچھ سنا۔ مگر کسی چیز نے بھی مجھ پہ بہت زیادہ اثر نہیں ڈالا۔ اگر ان اثرات کا پوچھا جائے تو میں محض یہ کہہ سکتا ہوں کہ انہوں نے میرا چڑ چڑا پن ...

Read More »

دوپہر ۔۔۔ میکسم گورکی

سورج دوپہر کے نیلے آسمان میں پگھلا جارہا ہے۔ اور اپنی گرم، قوس قزح کے رنگوں کی شعاعیں زمین پر اور سمندر پر بکھیر رہا ہے۔ نیم خوابیدہ سمندر میں سے رنگ بدلتے ہوئے بلور کا سا کہرا اٹھ رہا ہے نیلگوں پانی فولاد کی مانند چمک رہا ہے اور نمکین پانی کی تیز بوبہہ کر ساحل تک آرہی ہے۔ ...

Read More »

چور اور بہادر سپاہی ۔۔۔ رسول میمن/ننگر چنا

وہ چور تھا،ایک عقل مند چور۔وہ جب کم سن تھا تب اس نے نابینا گداگروں کے کشکولوں سے پیسے چرائے۔جب جوان ہوا تب اس نے دل چُرائے اور جب بڑھاپے کے قریب ہوا تو اسے پتہ چلا کہ کہیں نوفل کا محل بھی ہے،جہاں پندہ سوبرس پرانی ابوجہل کی بوتل کسی مے نوش کا انتظار کررہی ہے۔ کسی زمانے میں ...

Read More »

سیٹی ۔۔۔ راشدہ قاضی

مجھے وہ دن اچھی طرح یاد ہے کہ جب بے نظیر بھٹو کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش ہونی تھی۔ میں بے حد پریشان تھی کہ پھر ایک منتخب حکومت بیورو کریسی کی سازشوں کا حصہ بن جائے گی۔ میں اپنے ایک ترقی پسند استادسر علی افتخار صاحب کے پاس گئی۔ میں نے بھیگی آنکھوں سے اْنہیں دیکھا اور ...

Read More »

چھال ۔۔۔ نجم عباسی/س ب کھوسو

گاؤں کے نزدیک پہنچ گیا تھا۔ سورج پہاڑوں کی اوڑ غائب ہوچکا تھا۔ میں تھکا ماندہ۔ سر پر کتابوں کا بستہ تھامے شلوار کے پائنچے ایڑیوں سے اوپر کھنچے ہوئے۔ جوتے اور پاؤں گھٹنوں تک دھول سے اٹے ہوئے جلدی گھر پہنچنے کے لیے لمبے لمبے قدم اٹھائے ہوئے چلا آرہا تھا۔ اچانک یا دآگیا کہ بوڑھی عارب کی ماں ...

Read More »