Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » Javed Iqbal (page 30)

Javed Iqbal

نسترن احسن فتیحی 

ایک لڑکی ہواوں کے دامن سے وقت کے خونی پنجے جب ایک لہو لہان لڑکی کو کوکھ سے نوچ لیتے ہیں یا تتلیوں کے پیچھے بھاگنے کی عمرمیں کوئی کلی مسلی ہوئی کچرے پر ملتی ہے یا پھر اپنے نڈرشباب کے ساتھ درندوں سے سینہ سپر ہو کر لڑتی کسی مجاہد کی مانند سفر آخرت پر نکلتی ہے تو قبر ...

Read More »

مہلب نصیر

کَدَّھے پرْشتگان انچیں دردان گوَستگان مرچی ترا جیڑگ نجیڑگ نون نبیت ترا ٹیکی کنان جِندئے تئیی وت گون بان بیا زِندگی دْبَر کنان یَکّے یما کہ گوَستگ و دْہمی ہما کہ نون گوَزیت ہَمراہیا ایوک مکن نہ کہ وتا، نہ کہ منا چو سر گِرگ133!؟ زانئے رؤگ چیا گوَشنت؟ جِندئے سِدگ تؤ دیستگنت؟ اے ہم ہما پئیم اِنت وتا جندا ...

Read More »

مومن مزار

“بنام” رژناہ اَت آزمان ھما شپ اَ تو پہ منا آتک ءِے بلے پہ وت شْت ءِے پدا تاں چْنت وھد چْنت زمانگا ترامن ھچ نہ دیست بس ھمے من اِشکْتگ کہ شہر ھلوتازرتگ

Read More »

منیر رئیسانی

دل کا کیا کیجئے (توکلی مست سے ماخوذ) دل ہے دل کا کیا کیجئے کرتا ہے بالک ہٹ دیوانوں سی ضد کرتا ہے دل کا کیا کیجئے وادی کے سب سے اونچے پربت کی سب سے اونچی چوٹی اور سب سے دشوار ڈھلانوں پر جو پھول کھلے وہ مانگتا ہے بیٹوں جیسی ضد کرتا ہے دل کا کیا کیجئے دل ...

Read More »

مصطفے شاہد

یاد دہانی اُس رات وہ چور دروازے کے پیچھے کھڑا تھا اُس نے دَرز سے دیکھا کمرے میں حقیقت ننگی کھڑی تھی اگلی صبح کپڑے پہن کر جب وہ دفتر کی طرف جانے لگا تو اس نے خود سے کہا:۔ ’’میں غلط بھی ہوسکتا ہوں‘‘ شام کو اُس نے یہ بات فریم کرکے کمرے کی دیوار پر لٹکا دی!۔ بھوک ...

Read More »

محسن شکیل

بوریت  خواب کے دستخط کیے تکیے رات کے پاس ایک بستر پر رکھ دیئے اوڑھ کر تری چادر میں پھر آج شب نہیں سویا! صبح چڑیوں کی گفتگو سے ہوئی دوپہر کام کر کے تھک سی گئی شام کافی کی تلخ چسکی میں بوریت فلم سے مٹائی گئی نظم نے حوصلہ بدن کو دیا اور امید اک کہانی نے چین ...

Read More »

محسن چنگیزی

ہمارے واسطے اب تو ہمارے واسطے اب تو کیلنڈر میں کسی آسان دن کی کوئی گنجائش نہیں ہے اور ایسا بھی نہیں ہم کو بھلے دن کی کوئی خواہش نہیں ہے ہمالہ جیسے مشکل وقت کو سنگاب کرنے کے لیے تیشہ نہیں توناں سہی ۔۔۔لیکن ہمیں یہ حکم پہنچایا گیا ہے کہ ضرب المثل سے ہم کچھ تو سیکھیں سوئی ...

Read More »

گلناز کوثر

سفر تھکے تھکے سے پاؤں دْور منزلوں کے سلسلے عجیب سے وہ سامنے پڑاؤ بھی مگر نہ جانے کیوں ہر ایک بار پھیلتے رہے ہیں سامنے نگاہ کے یہ رنگ ہیں کہ راستے بڑھی ہے لہر کاٹتی ہے کلبلاتی ڈوریاں یہ لہر درد کی ہے یا کچھ اور ہے عجیب ہے تھکے تھکے سے پاؤں اندھے راستوں پہ بیکراں مسافتیں ...

Read More »

قندیل بدر

کیا حکم ہے میرے آقا سنو لوگو !۔ مرے ہاتھوں میں جادو ہے مَیں دن کو رات کر سکتی ہوں اور سورج کو چھو منتر تمہیں یہ سن کے بھی ہیبت نہیں ہوتی تمہیں وحشت نہیں ہوتی لو پھر تیار ہو جاؤ تمہیں حیران کر دوں کیا تمہیں رستہ بھلا دوں گھر سے مسجد کا تمہارے من کے مندر میں ...

Read More »

کے بی فراق

مجھے شاہی بازار میں رہنے دیں ابھی ابھی وہ سیمیں تن بالکونی پر آئی تو وقت کے پھیرے ازخود پرکار کی صورت دائرہ در دائرہ پھیل رہے تھے اور کہیں اس وقت کے نین نقش میں ایسے سیمیں تن کی مہک ان گلیاروں سے کمل روپ کی مہکار پہن کر یوں پھیل رہی تھی کہ اوپر کسی بالکونی میں آواز ...

Read More »