Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » Javed Iqbal (page 232)

Javed Iqbal

محمد بیا رسول اللہ ۔۔۔۔ جوانسال بگٹی

محمد بیا رسول اللہ شفاعت بی پرے کُلاّ سرئے معراج تئی تختیں ہمے مئے اُمتہ بختیں بیا کہ آخری وختیں گشی پاکیں کلام اللہ محمد بیا رسول اللہ شفاعت بی پَرے کُلاّ ہموذا روش دا تایا محمد ¿ مصطفےٰ بیایا کناثیں چادرئے سایا وثی پوشیدغیں جُھلاّ محمد بیا رسول اللہ شفاعت بی پَرے کُلاّ ہمختر مَں دلا سئی آں محمد ...

Read More »

فلسطینی ماں ۔۔۔۔ فاطمہ حسن

زخم میرے ہرے ہیں ابھی دیکھو میرے بدن پر لگے گھاﺅ سب رس رہے ہےں ابھی غور سے ان کو دیکھو گے تو ان کی تکلیف تم کو نظر آئے گی یہ وہ گھاﺅ ہیں جن کو مری آنکھ نے اپنی پلکوں سے بچوں کے تن سے چنا اور سمویا ہے اپنے بدن کے ہر اک عضو میں! ان کا ...

Read More »

نوشین قمبرانڑیں

ہوئیں حیرت کے بھی اُس پار آنکھیں خلاﺅں میں نہ اپنی گاڑ آنکھیں رہیں روشن تری دلدار آنکھیں نہ مجھ پہ اب تُو اپنی وار آنکھیں بنیں شہدا کی قبروں کی خموشی کبھی زندان کی دیوار آنکھیں کبھی داغی گئیں یہ بھٹیوں میں کبھی پیہم ہوئیں سنگسار آنکھیں لپیٹے جارہی تھیں ہست و ہُو کو ھنور سی وقت کی پُر ...

Read More »

نظم  ۔۔۔۔ سحر علی بلوچ گوادر

”رات دریچہ کھول دیتی ہے“ رات دریچہ کھول دیتی ہے اپنے پودوں سے آسمان روتا ہے اک زمین کا تارا دیکھ کر جسکی چمک کھوگئی وقت کے اندھیا روں میں یہ کسی خلقت ہے جس میں ناری کی سانسیں دھنس جاتی ہیں زمین دوز ہوکر فلک ماتم کرتا ہے آبشاروں میں قید خانے بھی سستے پڑگے جہا ں روز چنری ...

Read More »

عباس رضوی

چند لمحوں کی رفاقت نہیں مل سکتی کیا اک ملاقات کی عزت نہیں مل سکتی کیا وہ تراقرب وہ خوشبو ترے پیراہن کی مجھ کو پھر سے مری دولت نہیں مل سکتی کیا دور سے دیکھ لیں اُس شاخِ صنوبر کی طرف وحشتوں کو یہ اجازت نہیں مل سکتی کیا شہر میں کوئی نہیں اُس کی شباہت والا کسی صورت ...

Read More »

نظم ۔۔۔۔ دانیال طریر

دےے سے لو نہیں پندار لے کر جا رہی ہے ہوا اب صبح کے آثار لے کر جا رہی ہے ہمیشہ نوچ لیتی تھی خزاں شاخوں سے پتے مگر اس بار تو اشجار لے کر جا رہی ہے میں گھر سے جا رہا ہوں اور لکھتا جا رہا ہوں جہاں تک خواہشِ دیدار لے کر جا رہی ہے خلا میں ...

Read More »

سرمایہ اور جاگیردارانہ جمہوریت ۔۔۔۔ طالب حسین بٹالوی

کروں نہ جب تلک کوئی بھی دھندا ہو نہیں سکتا میرا بینکوں میں اِتنا پیسہ اکٹھا ہو نہیں سکتا مجھے رشوت کرپشن سے بنانا مال آتا ہے میں لیڈر ہوں میرا یہ شوق مٹھا ہونہیں سکتا یہاں محنت کشوں کی کوئی پونجی ہے نہ کُلی ہے مگر زردار کا نہ ہو پلازہ ہو نہیں سکتا میں یورپ کے منظم غاصبوں ...

Read More »

بوہانٹو ۔۔۔۔ عزیز مینگل

دانمرود و فرعون و شداداک معصوما ارمان تا جلاداک خدانا ڈغارَٹی مہری آ بش کرینو خاخر پسات اس اُشنگار داٹی بارُن پالُن خَرُن وسم آ آبادیک نازل و داٹی زیبا غا معصوم بشخندئی آمرواریک زرنا دا بوہانٹو بدرنگ دا حوکما کیرغ شاغا نے اینو مال و معدن و مڈی تے مَونا بلا مزہ پِڈ اِنانے سیر غانی آن مون کرینے ...

Read More »

نذر پہ جی آر ملا ئے ارواہا ۔۔۔۔ کریم ساحر

چنیں کندیلے بیاران من وتی رژنا بے بالینیت تہاریں دھاں گیدی ئے بدنت تاھیرا ستالاں بسا ڈینیت دلے تاراں جبین ئے اندر ئے انسان مروچان پہکہ بے چار انت چراگے نیست رژ ناہیں نہ بئے گواڑگ ئے توکا نہ چمک آپ ریچاناں نہ گالاں شادھیں گنداں نہ ملائے گہیں گنداں بہ دنت پنتے چہ لبزاں گوں بساڈینیت دلے تاراں بہ ...

Read More »

غزل ۔۔۔۔ کامران علی جمالی۔ ڈیرہ مراد جمالی

نادان دل اداسیں بیایار مل تو انتظار منا بازیں بیا یار مل تو مجنوں صفا بیزاغاںتئی عشق تا صنم نہ حوش نہ حواسیں بیا یار مل تو بے چین زندگی اوں بیتاب آں دوئیں چم اے آخری مئیں آسیں بیا یار مل تو محلات اوں موٹریں نئیں ہچ منا ضرورت بس تئی سرا نازیں بیا یار مل تو کامران گو ...

Read More »