Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » Javed Iqbal (page 232)

Javed Iqbal

گل زمین ۔۔۔ ڈاکٹر علی دوست بلوچسعدیہ حکیم

جب رات کے کسی پہر دنیا کے یہ سوغات رنج و الم کی صورت زندگی کو قبضے میں کرلیتی ہیں اس لمحے ہماری آنکھوں سے دو ر بھاگتی ہے نیند کی پری ہمیشہ اس لمحے بے نام سی یادیں بے نام سی لذتیں بے مثال مہ وشوں کی یادیں آتی ہے ہماری آنکھوں سے دور بھاگتی ہے نیند کی پری ...

Read More »

غزل ۔۔۔ ضامن مراد ۔ پیشکان

ترا جب سے دیوانہ گیا ہوں میں مشہورِ زمانہ ہوگیا ہوں تو آنے کا جو وعدہ کرگیا ہے میں جینے کا بہانہ ہوگیا ہوں مِرے مدِّ مقابل میں کھڑا تھا سو آپ اپنا نشانہ ہوگیا ہوں رہا نہ دیر تک ویراں تِرے بعد پرندوں کا ٹھکانا ہوگیا ہوں نشہ باہر کے موسم میں ہے ایسا کہ اندر سے سہانا ہوگیا ...

Read More »

نازش مِہراں ۔۔۔ تشنہ بریلوی

(سوبھوگیان چندانی کو خراج تحسین) خُسر چلا گیا ہے نہ سلطاں چلا گیا انسانیت اُداس ہے انساں چلا گیا ویران ہوئی ہے محفلِ یاراں بھی دوستو افسانہ ¿ حیات کا عنواں چلا گیا تھا خود ہی انجمن کہ نہیں تھا وہ ایک فرد اک پھول کیا گیا ہے گلستاں چلا گیا سوبھوگیانچندانی رخصت ہوا ہے آج و ہ فخرِ قوم ...

Read More »

موت کا انتظار ۔۔۔ عابد کاظمی

ہم میں سے کچھ ایسے تھے جو عبادت کدے میںمارے گئے چیخ و پکار کے بعد چرچ کی بینچیں اور گھڑیال خاموش ہیں ہم میں سے کچھ ایسے تھے جو جرم سنا ئے بغیر مارے گئے موت کے شب و خون کے بعد ہزارہ ٹاﺅن پھر جاگ رہا ہے ہم میں سے کچھ کراچی کی گلیوں میں گولی سے مارے ...

Read More »

سال ِ نو ۔۔۔ مسرور شاد

جشن ہے ہر سُو سال نو کا سا ل گذشتہ کی تلخ یادیں پل میں کیسے بھول گئے ہم؟ آئینہ کیا ٹوٹ گیا ہے؟ یا دریا کے موجوں کے حوالے یہ سچ ہے کہ غم اور خوشی ایک بچھونے کے دو پہلو ہیں مگر لال جو بچھڑے ماﺅں کے پیارے بھائی بہنوں کے اجڑے سہاگ پہ نوحہ کناں نو بیاہی ...

Read More »

پیڑ کی شاخیں پیاسی ہیں ۔۔۔ عیسیٰ بلوچ

چاروں جانب سے آتی ہوئی سڑکوں کے مِلن مقام پر ہرے پتّوں سے بھرا ایک تناور درخت تھا بدن کی تھکن پی کر جواں ہو چکی تھیں شاخیں اس کی گول دائرے میں کھڑی عمارتوں کی آڑی ترچھی دیواروں کی پوشاکیں اُتار دیں تھیں سمندر کی خنک ہوا نے سود و زیاں کی بھول بھلیوں سے ناآشنا زندگی کے بَیل ...

Read More »

سوبھوگیانچندانی ۔۔۔ نور محمد شیخ

ایک پوری اور طویل عمر سرزمین سندھ کے ہر شہر و کوچے میں ہر محفل ِدانش وراں میں ہر مجلسِ وطن پرستاں میں اجالا کرکے یہ شمع بجھ گئی ہے سوبھوگیانچندانی: جسمانی طور پر ہمیں الوداع کہہ گئے ہیں مگر اپنے پیچھے انسان دوستوں کے لےے بے لوث محبت اور وفاداری کی ایک اَن مِٹ مثال چھوڑ گئے ہیں وہ ...

Read More »

غزل ۔۔۔ منظور ثاقب

پیچ کھاتی ہے بہت پاگل ہوا دیکھتی ہے جب کوئی جلتا دیا سنگ مر مر کی سلوں کو کیا خبر بارش اور مٹی کا یہ رشتہ ہے کیا پہلے بھی وہ سر نہ تھا کچھ کم بلند کٹ گیا تو اور اونچا ہوگیا ہے تقاضا عدل کا شاہیں بنے کل کسی اگلے جنم میں فاختہ اک ہتھیلی کی بنا رکھی ...

Read More »

گال ۔۔۔ حنیف حسرت

تو جیگ و دامن ئِ سرا پُل کشتگنت تو واہبانی نیلیں زر ا پُل کِشتگنت کرکینکیں باتنا کہ منی واب درا مداں تو زند مانئے دمک و درا پُل کِشتگنت درّداں گنوکی ئے کہ مہ پیڑا تو گُلبدن ما پہ ترا کہ لچہ و دستونک بستگنت تُرسا زمانگ ئِ ما بہ بیں چہر پرچی ئَ روچ ئے سرا او ماہ ...

Read More »