Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » Javed Iqbal (page 10)

Javed Iqbal

نظم کے لئے نظم ۔۔۔ سلیم شہزاد 

’’ سات جنموں کی الجھی کتھا نظم ہے ‘‘ نظم کہتی ہے ’’ آ ‘‘ آجا ————– کھیلیں ذرا میں تجھے ڈھونڈ لوں تْو مجھے ڈھونڈتا آئینوں میں کہیں پتھروں کے تلے سانولی دھوپ میں ’’ رنگ میں ‘‘ ’’ روپ میں ‘‘ ڈھونڈ ،،، دریاؤں میں تپتے صحراؤں میں ڈھونڈنے سے کہیں نظم ملتی نہیں ہاں مگر ہے ’’ ...

Read More »

غزل ۔۔۔ مبارک قاضی

دل ونتگیں کتابئے وڈا بیت گشگ نبیت دنیا چو سہب ئے واب ئے وڈا بیت گشگ نبیت باریں کدی اے دل گوں گماں ساپ و سلہیں تئی مہپرانی تاب ئے وڈا بیت گشگ نبیت اے نوبتاکہ کاگدئے پھل بود و بر کننت، ایشرک ہم گلاب ئے وڈا بیت گشگ نبیت ماھیگ کئے بزانت کجام گریشگاتچ انت زر جلگہیں، تیاب ئے ...

Read More »

زاہد راہی

رست پیری کہ ورناھی کجا شت بگش عشقا را نادراھی کجا شت مرچی تہنائے تو دمک ؤ باذارا ہما دوستانی ھمراہی کجا شت وتارا زندگی ئے باہوٹی آ بارت شپانی واب و آگاھی کجا شت مسیت ئے کنڈا کپتگ جیڑگا انت وپا و مہر ئے سوداھی کجا شت صواب ئے کڈکا نند ئے یا گناہ ئے جھندماں من کہ پارساھی ...

Read More »

عورت مکمل انسان ۔۔۔ شفقت علی عاجمیؔ 

مجھے آج کہا اک ناری نے تم مجھ کو گِنو ، میرے کام گِنو اور کام کے سارے دام گِنو اِس دام میں اُلجھے سانس گِنو سانسوں میں بہتا درد سنو! یہ درد مِری بے بسی نہیں یہ درد مِرا سرمایہ ہے مقروض ہیں سارے لوگ مِرے میں ساہوکار ہوں چاہت کی میں دھرتی ماں کی بیٹی ہوں میں پالن ...

Read More »

مراد ساحر

کچلیں یاتانی شیرین ماہکان زردئے ھنکین ئے زہیریں ماہکان رنج و بیمنا کیں شپانی دوستی ھاتراتئیگا مازیریں ماہکان تو چو پلیں ھانی آ گل دروشمیں دل تئی شیدا پکیریں ماہکان بیا بکن پیلہ وتی تو واہگا مئے جبین تئی چم ئے تیریں ماہکان آنہیا وماسر و چماں کنیں وت بلے مارا چے دیریں ماہکان

Read More »

زوراخ بزدار

وفائے ڈیوا مر مرغیں درشک مہرانی کومنڑغیں بیا کھں نوخیں عہذ کھولے تند پھشی غیں سندڑغیں۔ تئی دیرہاں گو چکر عذاواں دل ملوریں گو کھیوتانیں۔ تئی زہیراں مئیں جاں زہیریں۔ زہر جوریں اے زیند پھرماں۔ سر کناں مہ کئیا اے ڈکھاں۔ دانہہ زیرے پکو مں گنداں۔ ساہ سر ہڑدو جوکھواں نوں توروے مں کئیاشہ پنڈاں۔ ارتؤ کہ کائیے تہ زیند ...

Read More »

Myth — نوشین کمبرانڑیں

“مچھیرے جال پھینکیں گے جو پتھریلے سمندر میں تو بجری رنگ ساری مچھلیاں اور ریت کے جھینگے سیمنٹ کی بنی سب سیپیاں بھی ہاتھ آئیں گی وہ مچھلی بھی ملے گی سانولے لڑکوں کو پانی سے کہ جس کے دل میں پتھر ہے سنا ہے جس میں قطرہ قطرہ ساگر ڈوب جائے گا وہ پتھر جس کے بارے میں لکھا ...

Read More »

اماں  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

پازیب چوڑی نتھنی ہار سنگھار سے بے نیاز ہے یہ بندھن زنجیر کی یاد دلاتے ہیں اماں تو آزاد ہے بس آواز ہے خوشبو ہے جھنکار ہے پیار کی دلار کی کبھی ڈانٹ بھی اماں جو ٹف لو ہے جھاڑ جھنکاڑ مٹا کر صاف شفاف شیشے کی مافق انسان ڈھالتی ہے اماں جو آزاد ہے

Read More »

غزل ۔۔۔ عبداللہ شوہاز

سال مٹّ انت ماہ بدل بنت سہب ہم بیگاہ بنت گوں تئی یاداں مئے زندئے چاریں موسم پر گوزنت پہ امیتے عمر گوست ودرائیں دنیا سمبھ اِت مئے تماہ کلمانٹ بیتاں جزم زاناں پیر بنت کد پدا بوجیگا مہرئے شار تئی آچار بیت کد مئے چمانی تیابا موج ارس ئے سمبر نت مہہ چہ تئی بیکانی بامیں لنجمی آدر کپیت ...

Read More »