Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی

شیرانی رلی

شازیہ کی بیٹی ۔۔۔ آمنہ ابڑو

April-17 front small title

شازیہ، وہ کمسن ماں جسے بیٹی پیدا کرنے کے جرم پر شوہر نے کلہاڑیوں کے وار کرکے کوما میں پہنچا دیا اوہ۔۔۔ تو وہ تم ہو، ابا۔۔۔ وہ تم ہو، جس نے میری ماں کو مجھے جنم دینے کی پاداش میں موت و حیات کے دھندلے دوراہے پر نیند کی جنگ میں مبتلا کر دیا ہے، تو۔۔۔۔ یہ تْمہی ہو، ...

Read More »

عورت : سدا روشنی دینے والی شمع ۔۔۔ نور محمد شیخ

April-17 front small title

نثری نظم عورت:۔ کائنات ،دھرتی اور کتابِ حیات کا ایک روشن اور مکمل باب گھر میں ، معاشرے میں عورت کا وجود ایک انفرادی وجود دل ودماغ اور علم وشعور کے لحاظ سے وہ ، ایک پوری ہستی اس کا دل ، محبت سے بھرا اس کی شخصیت ،سراپا حُسن کائنات میں موجود حُسن کے سارے رنگوں سے آشنا اور ...

Read More »

خواب میں سفر  ۔۔۔  کشور ناہید

April-17 front small title

زندگی بدلی، فضا کا ذائقہ بدلا مگر چہرہ نہیں بدلا یہ عورت میرا چہرہ ہے۔ یہ عورت، دھوپ سے جلتے ہوئے آنگن میں میرے ساتھ کھیلی ہے۔ یہ عورت، غم کی بارش میں نہائی عمر کی ساری لکیریں پہن کے بھی مسکراتی اور اپنے دکھ ہواؤں کو سناتی سب میں خوشیاں بانٹتی شبنم سی لگتی ہے۔ مجھے معلوم ہے اس ...

Read More »

نظمیہ ۔۔۔ ادا جعفری

April-17 front small title

ستارہ زاد آنکھیں تم نے نہیں دیکھیں تم نے نہیں پڑھیں کنگن کے حلقوں کی تحریریں اُڑتے ہوئے رنگوں اور دم توڑتی ہوئی خوشبو کی آواز بھی نہیں سنی وہ کہہ رہی تھی یا شاید صرف سوچ رہی تھی ریشمیں ساڑیوں کم خواب لباسوں اور دیبا کی اوڑھنیوں سے میرے بدن کارواں رواں چھل گیا ہے وقت کی چھلنی میں ...

Read More »

رات عفریت سہی ۔۔۔ ن م راشد

April-17 front small title

رات عفریت سہی،۔ چار سو چھائے ہوئے موئے پریشاں جس کے خون آلودہ نگاہ و لب و دنداں جس کے ناخنِ تیز ہیں سوہانِ دِل و جاں جس کے رات عفریت سہی،۔ شکرِ للہ کہ تابندہ ہے مہتاب ابھی چند میناؤں میں باقی ہے مئے ناب ابھی اور بے خواب مرے ساتھ ہیں احباب ابھی رات عفریت سہی،۔ اسی عفریت ...

Read More »

شوکت توکلی

April-17 front small title

دل مئیں رغامی سمبری اْچھال کھن چھو سانوڑی کپتہ گروخاں چیچرے آزماں شیئغیں ھنگری بُتکامئیں جانا لڑزغے سوچاں کھناں بے لیکوی روح پھِرْکی بال گِفتغیں گوئنڈیں تِلے سرپد نوی ھیران ھْشکا جکثغیں بْت اے چھڑوئیں پدھری کڑکار نفتاں کھفتغیں دنہوں کھڑو بں سر بْری جیہر شہ بْڑزا سمبراں آو ریش کھناں بے لیکوی ہینژاڑ لہڑاں رْستغیں دڑی آں جنغاں واچھڑی ...

Read More »

ورکنگ وومن ۔۔۔ شہزاد نیرّ

April-17 front small title

دو نازک سے کاندھوں پر تم کِتنا بوجھ اُٹھاتی ہو گھر کی چھت کا کمر توڑ مہنگائی، بھاری ٹیکسوں کا دفتر کی ذمہ داری کا تیز کسیلی باتوں، میلی نظروں کا انگ انگ پر چلتی پھرتی آنکھوں کا گلی میں بیٹھے وزنی فقروں آنے والی کل کی بوجھل فکروں کا کتنے بھاری پتھر ہیں!۔ بیتی یادوں بیتی محبتوں کے وعدوں ...

Read More »

محمد رفیق مغیری

April-17 front small title

وانغ زانغ گو محبت استیں ذکر پِھکر ئے عادت استیں اولاد آدم ئے کل ما استوں امیر غریو ئے پر چے نفرت استیں دروغ گِلا ضد زہر و تکبر شیطان ڈولا مئے فطرت استیں علم و ادب ئے قدر نہ زانوں مال مڈی مئے ضرورت استیں عدل و انصاف چی نہ رسی رفیق ؔ ہر ہند ا ظلم ئے کثرت ...

Read More »

غزل ۔۔۔ ثروت زہرا

April-17 front small title

دیدہ ودل میں سم شہد کی تاثیرسی ہے خواب کی خواب سرائی تری تصویر سی ہے میں بدن راکھ کا بو آئی تھی ان آنکھوں میں لیکن امکان کی صورت کسی تعبیر سی ہے کس طرح اس کو بتاتے کہ گزرتی کیا ہے خواہشَ ناز صحیفوں سی ہے تفسیر سی ہے اے خدا کیاتری دنیا میں کوئی میرا ہے کیا ...

Read More »

غزل ۔۔۔ شمع ملک

April-17 front small title

ہجر آسیب کہ اعصاب پہ چھایا ہوا ہے یہ ترا عشق جسے سر پہ چڑھایا ہوا ہے ایک وحشت ہے جو آنکھوں میں چھپائی ہوئی ہے ایک آزار کہ سینے سے لگایا ہوا ہے اب کوئی دوست کہے گاتو ہنسی آئے گی اک تعلق نے مجھے اتنا رْلایا ہوا ہے یہ جو آنکھوں میں نمی ہے ، مری لائی ہوئی ...

Read More »