مصنف کی تحاریر : نسرین انجم بھٹی

تانبے کی عورت

  ہتھوڑے کے ہاتھوں میں سونے کے کنگن جچے کیوں نہیں اور تانبے کی عورت تپی— تمتمائی— مگر مسکرائی— جمی ہی رہی کیوں پگھل نہ سکی پاؤں جلتے رہے— وہ کڑی دھوپ میں بھی کھڑی ہی رہی اس کے آنے تلک لوٹ جانے تلک نہیں اس کو سچ مچ کسی ...

مزید پڑھیں »

بعد کے بعد

  صحیفے اترنے سے پہلے اور نبیوں کے نزول کے بعد ہاتھ سے گرے ہوئے نوالوں کی طرح ہمیں کتوں کے آگے ڈال دیا جاتا رہا اس درمیان، آنکھوں کے نیچے ہم نے اپنے ہاتھ رکھے کہ وہ پاؤں پر نہ گر پڑیں اور کانچ کا اعتبار جاتا رہے مجھے ...

مزید پڑھیں »

شبیر جان ئے ناما#بانک_سیمُک

  باریں کدی واتَر کَن ئے دِلگوشءَگیگءُ گوْرکَن ئے درچکےّ بِبئے ءُ بَرّ کن ئے تانگو نہ زاناں رپتگ ئے باریں کدی واتَر کن ئے جی پہ آ وھداں وانگ اَت شَہدیں ھیال ءُ تِرانگ اَت زانت ءُ زُبان ئے زانگ اَت دِل پہ وتن دیوانگ اَت اِے کِسہ ءَ ...

مزید پڑھیں »

کالی

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میرے بہتے سارے آنسو کالے اور تمہاری کھنکتی ہنسی بھی کالی کُن ہاتھوں کا سہارا لوں کہ لبوں پہ لالی پر کالی کے سارے ہاتھ ہی کالے ہیں انتظار کی سُلگتی لکڑیاں کہہ رہی ہیں آن لائن مُحبت اور کالے بستروں پہ لیٹنے سے تھکن کبھی نہیں اُترتی ہے ...

مزید پڑھیں »

رسترانی کانفرنس

انسان جوں جوں سماجی سائنس کی گہرائیوں میں اترتا جاتا ہے ، اُس کا سماجی ذمہ داری کا احساس بڑھتا جاتا ہے۔ چنانچہ مست تﺅکلی اب ایک غیر روایتی بلوچ بنتا جارہا تھا۔ جسمانی اور نفسیاتی دونوں صورتوں میں مونچھوں کا تائو نارمل ہوتا گیا ۔ اُس کی قبائلی گردن ...

مزید پڑھیں »

غزل

بُلبُلے شِیزار بَندیت دل نَلِیّا مَست بی گْوات کَشّیت غم تئی چو پِیپَّلِیّا مَست بِی نود ہر دیں شَنزگا بنت دل تَلِیّاں مان کئیت ناچ کنت پہ بے سَمائی جَنگَلِیّا مَست بِی حکمتانی زِیل و بَنداں بَستگیں رَکھّت نباں کوتَلیں چیز ءَ نباید کوتَلِیّا مَست بِی عشق آ آس اِنت ...

مزید پڑھیں »

آج عمر خیام کا یوم پیدائش ہے

ابوالفتح عمر خیام بن ابراہیم نیشاپوری کا اصل میدان علم ہیت یا علم نجوم، ریاضی اور فلسفہ رہا لیکن ان کی عالمی شہرت کا باعث ان کی رباعیاں بنیں۔ ان کی رباعیوں کا دنیا کی تقریباً تمام تر بڑی زبانوں میں ترجمہ ہوا ہے۔ اردو میں تو منظوم ترجمہ بھی ...

مزید پڑھیں »

رات بھی ایک بلیک ہول ہے

  نہیں ایسی کوئی بھی رات جس کا کہیں سورج کوئی نہ منتظر ہو رات بھی ایک بلیک ہول ہے جس میں دن کی روشنی دفن ہوجاتی ہے اور اگلے دن اسی بلیک ہول کی کوکھ سے ایک نیا سورج جنم لیتا ہے صبح کا پیغام لاتا ہے دوپہر کو ...

مزید پڑھیں »

ہفت روزہ عوامی جمہوریت

7مارچ 1973کے شمارے میں ”سامراجی قرضے پاکستان کی تباہی کا باعث ہیں“ کے نام کا مضمون ہے ۔اسی طرح ”سامراج سا لمیت کا محافظ نہیں ہوسکتا “ 24مارچ کے شمارے کا اہم مضمون ہے ۔ راولپنڈی کے لیاقت باغ میں 23مارچ کو متحد محاذ کے جلسے پر حملہ کیا گیا ...

مزید پڑھیں »

سیوی گپتہ تی دِنگاں

  زکریا خان بتارہا تھا کہ یہ پورا علاقہ راوی دریا کے کنارے آباد ہے۔ یعنی جتنے شہر اور قصبے ہیں (ساہیوال، ہڑپہ، اوکاڑہ، اور سست گھرا) یہ سب کے سب دریا کے سبب یہاں وجود میں آگئے تھے۔ پانی اور آبادی لازم وملزوم ہوتے ہیں۔ راوی اور ستلج کے ...

مزید پڑھیں »