جہاں جسکیں دَہ روش

چوکہ ہمے ڈولیں ہر زمانہ اے آ بی، شہر ئے عامیں زیندھ دہموذ کہ بیثہ بیثہ انقلابا نظر انداز کناناں روغئے چلاّناں۔ شاعر شیئراں لکھغئے ثنت………… پر انقلابہ باروا نہ۔ حقیقت پسندیں آرٹسٹ مِڈایول ئے روس ءِ سوادھانی بزاں انقلابا سوا دوہمی ہر چیز ئے پینٹنگاں ٹاہینغئے ثنت۔ صوبہاں ژہ ورنائیں جنک فرانسیسی پڑھغا پہ او وثی لہجہ و تلفظ ءَ درست کنغا پہ دارالحکومتہ کاتکنت او خوش باشیں زیبائیں ورنائیں افسر وثی زرتاریں ”باشلیکی“ جانا کثی آ او سینگھارتغیں سمارتغیں قفقازی زہماں لڑکینتی آ ہوٹلانی لابیانی وٹاں چرغئے ثنت۔ کسائیں سرکاری افسرانی خاندانی زالکار ا یک دوہمی لوغا پیشین ءَ چاہ واڑ تنت، کلاں وثی وثی تنگویں یا چاندی ایں،یا سینگھارتغیں شکر دان اور نیم ڈبل روٹی وثی وثی پژمیں بشکڑیانی اندرا پجی ءَ بڑت، او خواہش کث کہ زار بادشاہ گڑدی بیئے، یا گڑہ جرمن بیاینت یا ہمنگیں ڈولے بی کہ لوغی نوکرانی معاملہ گی اشی………… منی یک دوستے جنک یک پیشینے آ نیم گنوخی حالتا لوغا آتکہ اے خاطرا کہ ٹرام ئے کنڈیکٹر یں زالا ”کامریڈ“ گوئشتؤ ہما نہیا گوں ٹوک کثغہ۔

ہمشانی چیاریں کنڈاں مزں پاندیں روس چُکی دور کاں کپتیا یث، زاثؤیک نوخیں دنیا ئے پیدا بیغایث۔ ہماں نوکراں گوں کہ عالَما جا نا ورانی ڈولہ سلوک کث او نیستی برابر ا پگھار داثنت آں آزاد بیغئے ثنت۔ چبوانی جوڑائے قیمت صد روبلا ژہ زیات بیغایث او ماہ ئے پگھار اوسطاً سی و پنچ روبل اث۔ہمے خاطر ا نوکر قطار ا جکغ او وثی چبوانی گھیسینغاژہ انکاری اثنت۔ بلے اشیا دِہ زیات اے کہ نوخیں روسہ اندرا ہر مڑدو زالا ووٹ داثہ کث۔ مزدور کلاس ئے اخبار ثنت کہ نوخ و دریہغ دیوخیں ٹوک کثنتش۔ سوویت اثنت او یونین اثنت۔”ازووشچیکی“ (ٹانگہ والایانی)یک یونینے اث او پٹروگراڈ سوویت اندرا دِہ آنہاں نمائندگی گوئراث۔ویٹر او ہوٹلانی ملازم منظم اثنت او ٹِپ گرغا ژہ انکار کثش۔ آنہاں ہوٹلانی بھتاں نوٹس جثغثنت کہ لکھثیا اث ”ایذا ٹِپ گرے نہ جی“ یا ”اغر کسے آ میز ءَ چکا نغن پجینغی وثی روزی کٹغی ایں تو اے ہمنگیں ٹوکے نَیں کہ شما ٹپ آدیت آنہی بے عزتی آ کنیں“۔

محاذ ءَ چکا سپاہیاں افسراں گوں مڑائی کثنت او وثی کمیٹیاں گوں وث حکومت کنغ ہیل گپتئیش۔ کارخانہاں فیکٹری ورکشاپ کمیٹیانی بے نظیریں روسی تنظیما کہنیں نظاما گوں مڑثؤ تجربہ او قوت اووثی تاریخی مشن ئے احساس گوئر کثہ۔ دراہیں روس پڑھغاوستا بیغایہ او پڑھغایہ………… سیاسیاتا، اکنامکسا، ہسٹری آ………… پچیکہ مخلوق پوہ بیغا باڑایث………… ہر شہرا، محاذ ءَ چکا ہر سیاسی گروپ ئے وثی جند ہ اخبار اث ………… وختے وختے تہ یکّا ژہ زیات۔ ہزاریں تنظیماں لکھ ایں پمفلٹ بہر کثنت کہ فوجہ اندرا، ہلک و میتگ ءَ اندرا،فیکٹریانی اندرا، سڑکانی چکا پُر بیثنت۔ تعلیم ءَ تُن کہ اکھر وختا دَہ زوری دارغ بیثغہ، نیں انقلابہ پجیا درشانی جنونہ اندرا لہر آتکغہ۔ چھڑو سمولینی انسٹی ٹیوٹا ژہ سری ششیں مہینانی اندرا ہر روش موٹر او ریل گاڈی پُر بیث ٹنانی حساو ا تحریر درا شتنت او ملک ئے تُن توستش۔ روس پڑھغ ئے مواداں ہمنگا جیورینغایث چو کہ گرمیں ریخ آفا جیورینی اوہچ بَر سیر مہ وی۔ اواے، قصہ، دروغیں تاریخ، او خراوّ کنوخیں، سوّکیں افسانوی ادب نہ یث بلکنا سماجی و مالی نظریات، فلسفہ، ٹالسٹائی، گوگول و گورکی ئے تخلیقات…………

او گُڑ ہ تقریر کہ ہمانہانی اگھا کار لائل ئے ”فرانسیسی تقریر ئے سیلاب“ چَڑویک ترمپے اث۔ لیکچر‘ مباحثہ، تقریر………… تھیٹرانی اندرا، سرکسانی، سکولانی، کلبانی، سوویتانی، میٹنگانی کوٹوانی اندرا، یونینانی ہیڈ آفسانی اندرا، بیرکا نی اندرا ………… محاذ ءَ چکا خندقانی اندر ا،کسائیں شہر اں چوکانی چکا، فیکٹریانی اندرامیٹنگ ………… چکھر مزن شانیں سوادھے اث اے گِندغ کہ پوتیلوف کارخانہ ئے چِل ہزار مزدور سوشل ڈیموکریٹانی، سوشلسٹ انقلابیانی، لوڑ گوڑ کنوخانی، ہر کسے کہ بیا تکے ہمانہی تقریر ئے اشکنغاپہ گُندواں جَناناں کاتکاں ہرچی کہ آنہاں گوئشتہ کثے۔پٹروگراڈ ءَ اندرا او سجہ ایں روس ءَ اندرا مہینانی مہیناں دَہ ہر موڑ یک پبلک جلسہ جاہے اث۔ ریلانی اندرا، ٹرامانی اندرا ہر ہندے آ سذتی بحث شروع بیث…………

او گڑہ کل روس کانفرنس و کانگریس اثنت کہ آنہانی اندرا دو کانٹی نینٹانی مڑدم مچ بیثنت ………… سوویتانی، کواپریٹو سوسائٹیانی، زیمستو آنی، قومیتانی، پادریانی، راھکانی، سیاسی پارٹیانی کنونشن، ڈیموکریٹک کانفرنس، ماسکو کانفرنس، روسی جمہوریہ ئے کونسل………… پٹروگراڈ ایکو سہ چیار کنونشن بیغئے ثنت۔ ہر میٹنگ ءَ اندرا تقریر کنوخئے وختہ حد مقرار کنغئے کوشیشہ خلافا ووٹ دیغ بیث او ہر مڑدے وثی دلہ ٹوکہ کنغاپہ آزاداث…………

ما‘ریگا ئے پشتادوازدمی فوجہ محاذ ہ چکا آتکغوں کہ اوذا لاغر او پاذ شفا ذیں فوجی بے ہیلیں خندقانی گپّانی اندرا بیزار یا کپتی ایثنت پروختیکہ آنہاں مار دیثہ تو درک داثؤ کڑو بیثغنت گوں وثی پرنچثغیں دیماں،دڑتغیں جراں ژہ نیل بیثغیں گوژد سہرا اث او ہمانہاں باڑائیاگوں پول کثہ ”تہ پڑھغا پہ چی اے آڑتہ؟“

تبدیلی ئے خارجی او چمّاں ظاہریں علامت تونڑیں کہ باز اثنت، تونڑیں کہ ایگزانڈرنسکی تھیٹر ءَ اگھا مز شانیں کھیترین ئے بھُت ءَ دستایک سُہریں بیرغے دیغ بیثغہ او شمانہیا ابید، دروکا بدرنگیں سہریں بیرک، سجہ ایں پبلک بلڈنگانی چکا لُرکغااثنت، او تونڑیں کہ شاہی دانگ او شکر بانز بھورینتو سٹے جیثغثنت یا گذچکا داثو ڈھکثئی ایثنت او غضبناک”گرودوویے“ (شہری پولیس)ءَ ہند ا شہریا نی نرم تواریں او بے ہتھیاریں ملیشا سڑکانی چکا گشتا کنغایث …………گڑہ دِہ بے جوڑیں چیز باز اثنت۔

پہ مثال پیٹرِ دی گریٹ ئے رینکانی لڑ، کہ آنہیا پہ زور روسہ چکانازل کثغت، دانڑتی دِہ پیلویا جاری اث۔ سکولی چکاں گِرداں بڑز ا ہر مڑدے آ وثی مقراریں وردی جانہ کث کہ آنہی بٹنانی او کوفغئے پٹیانی چکا بادشاہہ نشان ٹھیثیایہ۔دیغرئے گوئش کہ5 وجا آ سڑکانی چکا وردی گُراکثغیں پیریں اشرافانی یک گڑوے بیث کہ بارک ءَ ڈولیں وزارتانی اندرا یا سرکاری ادارہانی اندرا کار ءَ کنغا رند فائلاں زڑتیا لوغہ شتنت او شاید لیکوا کنغئے ثنت کہ آنہانی افسرانی اندرا مرگ ئے نسبت چکھر زیات بی تہ آں ”کالجیٹ اسیسر“ یا”پریوی کونسلر“ ءِ مزں شانیں عہدہا دَہ پجنت او ریٹائر بیغ و آرامی ایں پنشن رسی او شاید سینٹ این کراس دِہ ڈھی …………

سینیٹر سکولوف ئے قصہ مشہوریں کہ آں انقلاب ئے مزائیں لڑ گمہ وختاں یک روشے سینٹ ئے میٹنگامں عامیں سولیں جراں گوں آتکہ او آں اندرا پیہغا نہیشت ایش اے خاطرا کہ آنہیا زار ئے سروس ئے مقراریں وردی گُرا نہ یث۔

ایشث یک سجہ ایں قومے اندرا لہر آغ او انتشار ئے ہماں چاگردوپس منظر کہ آنہی اندرا بغاوتا پہ سمبرتغیں روسی عوام ئے جلوس اگھہ ودھغا شروع بیثہ…………۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*