ماہانہ محفوظ شدہ تحاریر : اکتوبر 2020

ثمینہ راجہ

(11ستمبر31-1961اکتوبر 2012) ثمینہ راجا کی ، جواں سال موت کی خبر ، بہت تکلیف وہ تھی۔ ہم ایک دوسرے کو جانتے نہ تھے۔ میں نے تو جینوئن شاعرہ کے بطور اس کا نام سن رکھا تھا مگر وہ تو پہلے مجھ سے بالکل ناواقف تھی۔ جینوئن میں نے اُسے سوچ ...

مزید پڑھیں »

غلطی

وہ کرلاتی کافی تھی۔ جس میں دیوانہ وار عشق کرنے کی بھرپور صلاحیت تھی۔ وہ صِلے کی خواہش نہ رکھتی تھی۔ تپتی رو ہی پہ دیوانہ وار رقص کرنے اور آدابِ رقص کی پابندی کرنے والی وہ کونج اپنی ڈار سے بچھڑ چکی تھی۔ اس لیئے ہر شام کونجوں کی ...

مزید پڑھیں »

ن م دانش

دانش کا تعلق پاکستان میں پروان چڑھنے والی اس نسل سے ہے، کہ جس نے شعور کی پختگی کو ضیا الحق کی آمریت کے دور میں عبور کیا۔ 1977ء میں نافذ ہونے والے مارشل لا کا زمانہ جبر، تشدد اور بندشوں کا تھا۔ جب سرِعام، حق گو صحافیوں کو جرات ...

مزید پڑھیں »

پہ نوک باہندیں نبشتہ کاراں سکین یے

پہ نوک باہندیں نبشتہ کاراں المی اِنت کہ آ وتی ازم ءُ ہُنر ءِ تہا شرّیں وڑے ءَ ایر بہ کپنت۔ پہ اے کار ءَ المی اِنت کہ آ وتی لبزانک ءَ بواننت، آئی ءَ بہ زاننت ءُ نزینک بہ بنت۔ شما گند اِت کہ بازیں نوک باہندیں نبشتہ کار ...

مزید پڑھیں »

واشنگٹن کی کالی دیوار

اپنی فیروز بختی پہ نازاں سیہ پوش دیوارپر آبِ زرسے لکھے نام پڑھتے ہوئے میری آنکھیں پھسلتی ہوئی نیہہ پرجاگریں الغِیاث! الاَماں!۔ ایک بستی کے جسموں کا گارا سیہ ماتمی مرمروں کے تلے اس کی بنیاد کا رزق تھے زائرین جوق در جوق اس غم زدہ دل گرفتہ کو اشکوں ...

مزید پڑھیں »

موتک

گرمیں روش سرا نشتو گراں ناز جنتھرا درشانا زہیریاں گشغااث۔ہمے ڈولہ مان کاخت کہ جنتھر دہ گراں ناز ئے زہیریانی پھسوا وثی توار ”گُرررر“ آ مں دیانا روغ اث۔گوئشے جنتھر گراں نازا گوں دڑداں بہر کنغااث۔جنتھر ئے ہمے توار گراں نازا پہ یہ دمبیروے اث، چنگے اث۔ وثی گونڈلیں بچ ...

مزید پڑھیں »

تائو کاکا

”میں بڑا کھوجی ہوں“ تاؤ کاکا اپنے قریبی رشتہ داروں کے گھر نئی نویلی دلہن کے پاس بگلا بھگت بنا بیٹھا تھا۔ کسی بازیگر کی طرح آستیں میں چھپائے ہوئے، کرتے کی جیب میں میں رکھے ہوئے، سر پر رکھی سافٹ ڈرنگ کی بوتل کے ڈھکن جیسی ٹوپی کے اندر ...

مزید پڑھیں »

تعریف کا خراج فہمیدہ ریاض کو

تاریخ کی خونی گلی تھی، اور فہمیدہ ریاض ٹارچر سیلوں میں تھے کڑیل جوان گمشدہ جن کی جوانی گمشدہ تاریخ کی خونی گلی تھی اور فہمہدہ ریاض عورتیں سنگسار تھیں اورُگناہگارُمحبت آدمی اورانکاری جبیں انسان کی وقت کے سارے خدائوں کے قہر کے سامنے سینہ سپر ایک فہمیدہ ریا ض۔ ...

مزید پڑھیں »

محبت کی ثلاثی. ..

محبت کی اس ثلا ثی کو جب جب لکھا جائے گا,وقت کی آنکھوں میں آنسو لہو بنکر رلائیں گے. ..ساحر کیلیے امرتا نے کہا کہ خواب بننے والا جولاہا ہی رہا کسی کا خواب نہ. بن سکا. . انکے جانے کے بعد انکے بچے سگریٹ کے ٹکڑوں سے قرب کشید ...

مزید پڑھیں »