ماہانہ محفوظ شدہ تحاریر : اکتوبر 2020

تماشا گاہ دنیا میں

اڑیں مہکی ہوئی زلفیں جھکیں بے باک سی نظریں بہکنے کو چلیں سانسیں الجھنے کو کہیں باہیں مگر دل میں دبے یہ کاغذی جزبے ضرورت سے بندھے بے نام دھوکے ہیں نہ صبحیں سورجوں کے رنگ پہنے ہیں نہ راتوں کے لئے چندا کے گہنے ہیں نگاہوں نے گھڑی کی ...

مزید پڑھیں »

دعا

آئیے عرض گزاریں کہ نگارِ ہستی زہرِ امروز میں شیرینیِ فردا بھردے وہ جنہیں تاب گراں باریِ ایام نہیں اُن کی پلکوں پہ شب وروز کو ہلکا کردے جن کی آنکھوں کو رُخِ صبح کا یارا بھی نہیں اُن کی راتوں میں کوئی شمع منور کردے جن کی قدموں کو ...

مزید پڑھیں »

کاکیشین حکایات اور رسول حمزہ توف

الاوٗ کے پاس بیٹھے ابو طالب نے قصہ شروع کیا ؛ کاکیشیا کی ایک ریاست میں شاعروں کی بہتات تھی ۔ یہ بستی بستی گھومتے اور اپنے گیت سناتے ، کسی کے ہاتھ میں ‘ پاندور ‘ ہوتا ، کسی کے ہاتھ میں ‘ طنبورہ ‘ ، کسی کے پاس ...

مزید پڑھیں »

سرمدی آگ

سرمدی آگ تھی یا ابد کاکوئی استعارہ تھی، چکھی تھی جو کیسی لوتھی!۔ خنک سی تپک تھی تذبذب کے جتنے بھی چھینٹے دئے اوربڑھتی گئی دھڑکنوں میں دھڑکتی ہوئی سانس میں راگ اورسرْ سی بہتی ہوئی پھول سے جیسے جلتے توے پرہنسیں ننھے ننھے ستاروں کے وہ گل کھلا تی ...

مزید پڑھیں »

ہڑپہ

ہڑپہ کے آثارِ قدیمہ بہت مشہور ہیں۔ آثار قدیمہ (آرکیالوجیکل سائیٹ)کو بلوچی میں ”دَمب“ کہتے ہیں۔میں حیرت سے دیکھ رہا تھا کہ ہڑپہ کا دمب کئی میل پر پھیلا ہوا ہے۔ظاہر ہے کہ سارے رقبے کی کھدائی توبہت پیسہ اور بہت مہارت مانگتی ہے۔ اس لیے اِن آثار کی صرف ...

مزید پڑھیں »

جمہوریت کی تحریک

یہ ایک قسم کی انقلابی نرگسیت ہے کہ اگر سماج کے مختلف طبقے اور پرتیں بعض جمہوری مطالبات پر متفق ہوں تو انہیں سیاسی اور تنظیمی طور پر بھی "یکساں” سمجھنا شروع کردیا جائے۔ عمومی جمہوری سیاسی تحریک میں مجموعی سیاسی قوتوں کے درمیان کوئی "دیوارِ چین” حائل نہیں ہوتی۔ ...

مزید پڑھیں »

ہم ہیں ۔۔۔۔۔۔ حالانکہ نہیں ہیں ۔۔

ہم نے ایک دوسرے کو ایک دوسرے سے چرایا اوراس کنویں میں چھپا دیا جسے بلیک ہول کہتے ہیں ہم تھے۔۔۔۔۔۔۔۔مگرنہیں تھے پھر۔۔۔۔۔ وقت کے ہیرپھیرنے، اتھل پتھل نے کا ئنات کا سارا لکھا مٹا دیا سارا بنا بگاڑ دیا مشرق سے مغرب تک شمال سے جنوب تک زمیں پرنقطوں ...

مزید پڑھیں »

موت کو الوداعی بوسہ!

بے جان سرد جسم، بے نور آنکھیں، ساکت چھاتی، دل کی بیرونی عضلاتی دیوار اور ہمارے تیزی سے حرکت کرتے ہاتھ، بے ترتیب سانسیں، سینے سے باہر کو آتا دل! ہم بے طرح ہانپ رہے تھے لیکن رک نہیں سکتے تھے۔ اس ٹھٹھرے ہوئے جسم میں بے بس دل کی ...

مزید پڑھیں »

جمعہ سیٹی والا

ڈھاڈر شہر پورے بلوچستان میں اپنے سرسبز کھیتوں سایہ دار درختوں اور بہتی ندیوں کی وجہ سے مشہور ہے۔ یہاں کے بازار صبح سویرے ہی آس پاس کے دیہات سے آئے لوگوں سے کھچا کھچ بھر جاتے ۔ کوئی بکریاں مرغیاں اور دیسی انڈے بیچنے کو صدا لگاتا تو کوئی ...

مزید پڑھیں »

ترقی پسند فکر اور عصری تناظر ( ادیبوں کی ایک کانفرنس کے لیے لکھا گیا)

پیر کی ہمیشہ کوشش رہتی ہے کہ اس کا خلیفہ بھوکا، ننگا، اور تنگ دست رہے ۔ تاکہ وہ اُس کی روحانی محتاجی اور جسمانی چاکری میں ہی لگا رہے ۔ اور ہر نئے پرتجسس دکھ میں مزید خلوص سے اُسے مدد کو پکارتا رہے۔ سلسلہ دکھوں اور دعاؤں کا ...

مزید پڑھیں »