ماہانہ محفوظ شدہ تحاریر : ستمبر 2020

چارلس ڈکنز

چارلس ڈکنز کا نام دنیائے ادب میں کسی تعارف کا محتاج نہیں ہے۔ چارلس وکٹورین ایرا کے لکھاری تھے جن کا بچپن سخت حالات میں گزرا اور اس کی جھلک ان کی تصانیف کے کئی کرداروں میں ملتی ہے۔ وہ معاشرے میں بچوں اور عورتوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں ...

مزید پڑھیں »

۔۔

اساں پاندھی سچ دے سفریں دے, سچ بول سگیں تاں رّل آ. سک نال صلاح کر سانول کوں , جے گول سگیں تاں رّل آ. ساڈے رلدیں روحیں نال جیکر , روح رول سگیں تاں رّل آ. ایں راہ تیں سالک ساہ لگدے , ساہ گھول سگیں تاں رّل آ.

مزید پڑھیں »

شاہ عنایت ۔۔۔شاہ محمدمری

شاہ محمد مری بلوچستان کی چٹانوں جیسا ہے .جن پر صدیوں کی داستانیں تجریدی آرٹ کی صورت ثبت ہیں _ دانیال طریر نامی شاعر نے اسے کیا خوب بلوچستان کا "شاہ بلوط” کہا ہے. ان چٹانوں پہ پگلی پھرتی اور کبھی شانت ہولے ہولے بہتی ہوا میں آوازوں کی بازگشت ...

مزید پڑھیں »

کتاب:۔ جدلی و تاریخی مادیت کے اصول

نشوو نما،متضاد عناصر کے تصادم کا نام ہے!۔ صفحات: 104 قیمت:200 روپے مبصر:عابدہ رحمان سی آر اسلم صاحب کی یہ کتاب ان کی کتاب’علم المعیشت‘ کی طرح ہی مشکل ہے اور اتنی ہی اہم، یا پھر مشکل تو نہیں لیکن شاید مجھ جیسے بندے کے لیے تھوڑا غور و خوض ...

مزید پڑھیں »

کواڑ بند ہیں!

سب دریچوں میں گرد ٹھہری ہے مدتوں سے ۔۔ سبز شاخوں کی سب رگوں میں اکیلے پن کا زہر بسا ہے۔۔۔۔ چراغ اوندھے ہیں ، آبخوروں میں آب اترے زمانہ گزرا۔۔ تم آج آئے ہو! جبکہ میرے بالوں میں مکڑیوں نے ٹھکانہ کر کے۔۔ میری پلکوں پہ جال بن کے ...

مزید پڑھیں »

اخبار ” اسکرا”

غیر قانونی اخبار ”اسکرا“(چنگاری) اُس زمانے میں روسی مارکسسٹوں کا مرکزی ترجمان تھا۔اسے بیس سال سے جلا وطن،پلیخانوف اور دیگر بیرونِ ملک سے چلاتے تھے۔ مئی 1900میں لینن، مارٹوف، پوتریسوف اور دوسرے مارکسٹ خفیہ طور پر پسکوف میں ملے۔ وہ بیرون ملک اپنا اخبار چھاپنے کا حتمی منصوبہ بنانے جمع ...

مزید پڑھیں »

غزل

ستا د‌ ښائست او ګل ورین نظر بلا واخلم وږمه وږمه شمه او سپړ شم چي نوم ستا واخلم چي شم ورپېښ کله په کرکه او په مينه باندي پرېږدم تياره لمن خوره کړم او رڼا واخلم وایه چي څنګه به شي ورک زما د زړه غمونه وي ستا فراق ...

مزید پڑھیں »

*

چو بے ترک ءُ الگار ھمچو کہ من صدایاں گرفتار ھمچو کہ من بہ بِی ہر کسے یار ھمچو کہ من مہ بِی کس سُبکسار ھمچو کہ من اے زِر چو منا ساکت ءَ ساکت اِنت وتی اندر ءَ گار ھمچو کہ من شپے گوں وتا دارگی اِنت منا شپے ...

مزید پڑھیں »

سَنیہا

اُٹھی سَئیݨ سُوہݨی ذدا ڈیکھ تاں سہی تیڈے چندربھاگے دے پاݨیاں وچ ول رتول جھال پئی ڈیندی اے ول عورت دا اتھاں قتل تھیا اے ول مرد کوئی ازلی چُپ اچ ھن ول وُسوں کوں کوئی نانگ لڑئے ول دھی توں منہ لکیندے َپئین ول عزت دے نانویں سولیاں ھن ...

مزید پڑھیں »