ماہانہ محفوظ شدہ تحاریر : اگست 2020

کھیترانڑیں شاعری

بارکھان بلوچستان تا علاقہ ئے ہیچ کھیترانڑ پیا جالیدائے کھیترانڑ مری بگٹی تا بھائے وختوں لیع بلوچستان تی پیا جالیدائے چاکر بارکھانوں جیع وخت گزرائے کھیترانڑ تا لشکر چاکر ساں گیڈ گیائے بارکھان بلوچستان تا علاقہ ئے ہیچ کھیترانڑ پیا جالیدائے کھیترانڑ تا مسئلہ زبان تائے ہیئع پاروں نوری نصیر ...

مزید پڑھیں »

سمو دیس(پیربیہو)

کوہ سلیمان جہاں تاریخی لحاظ سے خاص اہمیت کا حامل ہے وہیں خوبصورت مقامات اور اچھی ثقافت بھی اس کا حصہ ہیں۔ سیاسی لحاظ سے پسماندہ ہونے ، تعلیم اور بنیادی سہولیات جیسے سڑک و ذرائع ابلاغ نہ ہونے کی وجہ سے یہ علاقے دوسرے علاقوں سے نہ جڑ پائے ...

مزید پڑھیں »

نظم

ہم نے سنا ہے خواب دیکھنے پر سوال کرنے پر دلیل دینے پر پابندی ہے، ہم نے سنا ہے یہاں اپنے حقوق مانگنا اپنے عقائد پر عمل کرنا جرم ہے ہم نے سنا ہے یہاں بات کرنا سچ کو دھرانا خدمت کرنا کتابیں لکھنا کتابیں پڑھنا جھوٹ سے انکار کرنا ...

مزید پڑھیں »

امید کا مشکیزہ

آس، امید کا پانی بھر کے اک مشکیزہ روز سویرے پیٹھ پہ لادے میں باہر آ جاتا ہوں ٹوٹے پھوٹے دل کے ٹکڑے گارا کر کے پھر سے ان کی شکل بنانے جوڑ لگانے آ جاتا ہوں درد مٹا کے دل بہلانے آگ بجھا کے پھول کھلانے دکھتے دل پہ ...

مزید پڑھیں »

سنگت ایڈیٹوریل۔۔۔ ون یونٹ کی طرف

بلوچستان سے لے کر مغربی صنعتی دنیا تک آٹھ ماہ سے کووِڈ19کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔ یہ وبا”سنگت اکیڈمی “سے بھی ایک البیلا میٹھا نوجوان کھا گئی۔اور اس بیماری سے زدو کوب توہمارے کئی سنگت ہوچکے ہیں۔ بلوچستان میں سینکڑوں انسان (سیاسی کارکن، ڈاکٹر، ٹیچر، محنت کش اور دیگر اہم ...

مزید پڑھیں »

ماہنامہ سنگت کا ایڈیٹوریل

ون یونٹ کی طرف بلوچستان سے لے کر مغربی صنعتی دنیا تک آٹھ ماہ سے کووِڈ19کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔ یہ وبا”سنگت اکیڈمی “سے بھی ایک البیلا میٹھا نوجوان کھا گئی۔اور اس بیماری سے زدو کوب توہمارے کئی سنگت ہوچکے ہیں۔ بلوچستان میں سینکڑوں انسان (سیاسی کارکن، ڈاکٹر، ٹیچر، محنت ...

مزید پڑھیں »

دلِ بے خبر، ذرا حوصلہ !

کوئی ایسا گھر بھی ہے شہر میں، جہاں ہر مکین ہو مطمئن کوئی ایسا دن بھی کہیں پہ ہے، جسے خوفِ آمدِ شب نہیں یہ جو گردبادِ زمان ہے، یہ ازل سے ہے کوئی اب نہیں دلِ بے خبر، ذرا حوصلہ! یہ جو خار ہیں تِرے پاؤں میں، یہ جو ...

مزید پڑھیں »

نظم

نیم زندہ لوگوں میں مکمل موت کسی کو نصیب نہیں نہ ہی کوئی پوری زندگی جی رہا ہے۔۔۔ جسم تیسری کائنات کے بوسیدہ بستر پر صدیوں سے عزرائیل کا منتظر ہے۔۔۔ آسمان پہ اترنے والی حبس زمیں میں گہری دراڑ کاٹ کر خوف کے قبرستان تعمیر کرتی ہے۔۔۔ کھڑکیوں سے ...

مزید پڑھیں »

شاعری

پہاڑ ہیں اور دریاہیں جہاں تک نظر جائے اس سے زیادہ وسعت کی ضرورت کیا ہوگی یہاں ہے ” لینن ندی” وہاں "کوہ مارکس” خالی ہاتھوں سے ہم ایک ملک تعمیر کررہے ہیں

مزید پڑھیں »