شئیر

گہے روش روشن پہ اے روزگار
گہے شپ کہ وفسی جہاں برقرار
گہے سیل وشادی گوں دوستاں اوار
گہے روث وفسی مں قبرے تہار
گہے گوئہروساڑتی زمستاں اوار
گہے سبزگلزارعجب خوش بہار
یکے میوہ شیریں یکے زہردار
زمیں یک نمونہ و میوہ ہزار

کبھی دن ہے روشن کہ چلے کاروبار
کبھی شب کہ سوئیں ،رہیں برقرار
کبھی سیر و شادی بہ یاراں ہمہ
کبھی جاکے سوئے در قبرے سیاہ
کبھی برف بستہ زمستان ہے
کبھی سبزہ گلزار عجب خوش بہار
ایک میوہ شیریں تو ایک تلخ زہر
زمیں ایک جیسی و میوے ہزار

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*