Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » ہاتھوں میں قلم رکھنا یاہاتھ قلم رکھنا! ۔۔۔۔۔۔ احفاظ الرحمن

ہاتھوں میں قلم رکھنا یاہاتھ قلم رکھنا! ۔۔۔۔۔۔ احفاظ الرحمن

مظلوموں کے ساتھ سفر کی اَ مِٹ چا ہت
ناداروں کے ساتھ مسلسل عہد رفاقت
رنگ ، نسل ، مذ ہب اور صنف کی عینک سے
انکا رِ اطا عت
ذات کے کاروبارسے دوری
دنیا کے غم میں مہجو ری
ساحر کے گیتوں پر جھوم کے سازاٹھا نا
کر شن کی دل کش تحر یر وں پر،
فیض کی دھیمی دھیمی لَے پر
جان چھڑ کنا
زرداروں سے نفر ت کرنا
ناداروں سے اُلفت کرنا
سر مائے کی ہیبت کو ٹھو کر میں رکھنا
سارے جہاں میں ظلم وجبر کے ہر کا روں سے لڑنے والے
جا ں با زوں کو دل میں بسا نا
ایک ہی ڈھب سے جینا مرنا
اے دل ِبے قرار ، ٹھیر ذرا
بچھڑی یادیں پھسلتی جا تی ہیں
ڈوبتے جاتے ہیں منظر سارے
میٹھی چھاﺅں کے دھند لکوں میں چھپے
مسکراتی ہوتی ہوئی یادوں کے رنگ
بیتی گھڑ یوں کا خواب ڈوبتا ہے
جال دھند لاہٹو ں کا پھیلتا ہے
کیایوں ہی زادِ سفر ڈوبتا ہے ؟
خون سستا ہے ، پانی منہگا ہے
سب پہاڑوں پہ ، ساری وادیوں پر
قاتلوں ، بھیڑ یوں کاغلبہ ہے
علم کے دشمنوں کا قبضہ ہے

اے دل بے قرار ٹھیر ذرا
ڈورامید کی تھا مے رکھنا
خواب کے رنگ نہ گر نے دینا
ٹھیر ذرا

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *