Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی »  کہاں جائیں گے؟‘‘ نذرِ اہلِ بلوچستان ۔۔۔ ڈاکٹر غلام سرور ساگر”

 کہاں جائیں گے؟‘‘ نذرِ اہلِ بلوچستان ۔۔۔ ڈاکٹر غلام سرور ساگر”

ہم پہاڑوں میں پڑے ہیں، سو کہاں جائیں گے
ہم قبائل میں جڑے ہیں، سو کہاں جائیں گے

اِک حکومت کا گلہ کرکے بھلا کیا حاصل
ہر حکومت سے لڑے ہیں، سو کہاں جائیں گے

ہم کو معلوم ہے ارباب سیاست کا چلن
یہ گراوٹ میں پڑے ہیں، سو کہاں جائیں گے

دیکھ تعلیم کی حالت، میرے بچوں کا نصیب
یہ مدرسوں میں پڑھے ہیں، سو کہاں جائیں گے

صرف غربت ہے کہ افراط میں ملتی ہے ہمیں
خشک ٹکڑوں پہ پلے ہیں، سو کہاں جائیں گے
ہم ہیں اقوام زمانہ کے مقابل ساگرؔ
پر جہالت میں گڑے ہیں ، سو کہاں جائیں گے

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *