Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » کم ذات آنسو ۔۔۔ احفاظ الرحمن

کم ذات آنسو ۔۔۔ احفاظ الرحمن

( کوٹ رادھا کشن کے ننھے بھائی بہن کے غم میں، جن کے ماں باپ کو آگ میں جھونک کر ہلاک کیا گیا)

اُمیدیں خون میں ڈوبی ہوئی ہیں
جو روشن تھے ستارے ، جاں کنی کی ڈور میں لٹکے ہوئے ہیں
دمکتی تھیں جوآنکھیں ، روتے روتے آنسوﺅں کے قحط کی تصور بن کر بُجھ رہی ہیں
ہر اک جانب سیاہی سوگ کی فصلیں اُٹھاتی ہے
یہ کس کی موت کا غم ہے، جو سینے میں کھٹکتا،
سانپ بن کر سرسراتا ہے
یہ کس گھر سے دھواں اٹھتا ہے ، جس کو دیکھ کر
دھرتی کا سینہ چاک ہوتا ہے
حیاتِ آدمی کا سب خزانہ خاک ہوتا
تمدن کے جہاں کا آئینہ بے نام ہوتا ہے
یہ کن اندھی منا جاتوں کا نوحہ ہے
یہ کس بچے کے آنسو ہیں
یتیم آنسو ہیں، بے کس، نا مُرادآنسو ہیں
سُولی پر لٹکتے بے نشاں ، کم بخت اور کم ذات آنسو ہیں
یہ آنسو گھُٹ کے مر جائیں گے، مٹ جائیں گے
مٹی سے لپٹ کر دفن ہوجائیں گے پل بھر میں
اب اس مٹی میں کوئی پُھول
اُگنے کی تمنا کر نہیں سکتا!!

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *