Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » کمر جھکا کر چلتا کل ۔۔۔ ثبینہ رفعت

کمر جھکا کر چلتا کل ۔۔۔ ثبینہ رفعت

پشاور تیرے پہاڑوں پر
میرا غرور قتل ہوا
جیون جنگ پر جاتے ہوئے
وہ طلبائے علم و ہنر
راہِ جستجو میں مار ے گئے
انہیں بے خبر مت جانےے
وہ سینہ تان کے چلتے تھے
اور پشت سے
اُ ن پر وار ہوا
تیرے پربتوں پہ پشاور
اُس دن سے ہمارا
مستقبل
اب کمر جھکا کر چلتا ہے

پشاور تیرے پہاڑوں پر
اب بزدل مارے جائیں گے
اور علم کی جوت سے جلتا ہوا
خون صحیفے لکھے گا
ہر دِشّا میں سورج دکھے گا
تم جنت ڈھونڈنے نکلے تھے
تم آنے والی صدیوں تک
تاریکی میں بھٹکو گے
ہر ماں کی آنکھ میں کھٹکو گے
ماں جنت کا در کھولتی ہے
رب کان لگا کر سنتا ہے
جب خاموشی کے لفظوں میں
کوئی ماں لب کھولتی ہے
اب ماں کے لب نہ سلیں گے
پشاور ترے پہاڑو ںپر
آزادی کی کرنوں سے
یہ انمول لعل و گہر
لالہ و جور سے کھلیں گے
پشاور ترے پہاڑوں پر
ہمیں سراٹھا کر چلنا ہے

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *