Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » نظم ۔۔۔ اِسحاق خاموش۔ کراچی

نظم ۔۔۔ اِسحاق خاموش۔ کراچی

’’ پری دروشم ‘‘ وہ ایسی ہے
شباہت پُھول جیسی ہے

بھڑکتی خواہشوں میں اب
سمندرکی روانی ہے

ہَوا نے بھیک مانگی ہے
فلک نے آگ برسی ہے

فصیلِ جاں شِکستہ ہے
غموں نے دُھوپ بھر لی ہے

رگڑ کھائی ہے پتھر سے
تبھی یہ چاند اُجلی ہے

نتیجے سے تُمہی واقف
کہانی تُم نے گھڑ لی ہے

چلو چلتے ہیں واپس اب
بچاری ماں بھی بُھوکی ہے

نہیں اُٹھتے اِسحاقؔ اب ہاتھ
دُعا جو اُس نے سُن لی ہے

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *