Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » مے کشو تُم کہانی کو بُنتے رہو  ۔۔۔ مبشر مہدی

مے کشو تُم کہانی کو بُنتے رہو  ۔۔۔ مبشر مہدی

مے کشو
تم کہانی کو بُنتے رہو
یم بہ یم
جُو بہُ جو
بن کے دریا محبت کا
بہتے رہو
جاوداں جاوداں
ہر گھڑی ، پل بہ پل
آرزو، جستجو یونہی چلتی رہے
جب تلک زندگانی یہ بڑھتی رہے
ہم نَفَسْ تم سبھی
دستِ قاتل کو یونہی جھٹکتے رہو
دائرہ ، دائرہ
جو وکیلِ دِیارِ زماں دیکھو تم
محتسب کی کماں کو نظر میں بھرو
سنگ زن واعظوں کے کچو کے سہو
ناصحوں کی یہ بے تدبیر اُلفت سہی
چارہ گر بھی نہ ہو دیکھنے کو کہیں
دستِ آتش نفس بھی تسلی نہ دے
اُسکے عارض کی لالی میں بھی فرق ہو
اُسکے تتلی سے نازک یہ مژگاں عنایت بھلے چھوڑ دیں
اُن کے لبوں کی مئے لالہ گوں ختم ہو
سارے انساں جہاں میں مقّید بھی ہوں
کہ جہاں بھی تو آخر قفس ہی تو ہے
مت ہو صبحِ یقیں ، صبحِ کاذِب سہی
مے کشو دم بہ دم
یہ تمہاری کتھا یونہی چلتی رہے
ساعتیں ہجر کی آج کم ہی نہیں
جام بَلّو ر ہاتھوں سے ملتا نہیں
ساز دستِ مُعّنی کا
دستِ عدو کی ہی زد میں سہی
اور تاریکی اپنا مقّدر سہی
پھر بھی تم مے کشو
ہاں کہانی کو بس یونہی بُنتے رہو

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *