Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ کاوش عباسی

غزل ۔۔۔ کاوش عباسی

جَبر کا ہر پہلو حال بَد کی تفسیروں میں لا
تجھ کو لکھِنا ہَے تو سَب اَحوال تحریروں میں لا

یاس بھی لکِھ ، یاس میں خوں کھو لتے اِنساں بھی لکھ
سَر پٹختی رو ح کا بھی ذِکر زنجیر وں میں لا

مُجھ پہ رو رو کر مِری جھولی میں خیراتیں نہ ڈال
میر کُھو لاؤ بھی میرے غم کی تشہیر وں میں لا

دوز خوں کے کالے پانی، جنتوں کے سبز باغ
سَب سَو سَ گیرِ خرَ د ہیں ، سب کو نخچیروں میں لا

ہا ں ہَے سَب حا لات سے ، پَر اَے کر ے حالات کے
اپنے خوں کا رَنگ بھی تو اپنی تقدیروں میں لا

تو مصور ہے تو میرے ٹو ٹنے کا عکس کھنچے
مَیں بِکھر تا ہوں ، میرے ریزوں کو تصو یر وں میں لا

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *