Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ مسرور شاد

غزل ۔۔۔ مسرور شاد

آگہی ڈستی ہے ماہکان رات کی
اور برابر شراکت ہے سر گوات کی

آپ مدام سیم و زَر سے تُلے جاتے ہیں
ہم کو حاصل نہیں قدر خیرات کی

محوِ حیرت ہوں امید رکھوں یا ڈر
تیرے انکار کی تیرے اثبات کی

کونج رخشان سے کب کے لوٹے ہیں یار
بانجھ موسم ہے کیا اب کے برسات کی

زندگی وقت پہ گھر تو آیا کرو
شہر زَد میں ہے پھر سے فسادات کی

بیچ تیرے میرے جذبہ حائل ہے جو
ایک رشتہ ساکرب و کرامات کی

بچے پڑھتے ہیں درسِ مساوات روز
گھر میں ہے تذکرہ ذات وزیارت کی

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *