Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ شمائلہ حسین

غزل ۔۔۔ شمائلہ حسین

کر نہ تنہائی کے شعلوں کے حوالے مجھ کو
کچھ بھی کر کے تو میری جان منا لے مجھ کو

میرے آنگن میں اتر بولتے سورج کی طرح
گھر کی تاریکی کہیں مار نہ ڈالے مجھ کو

کسی تعویذ کی صورت میں مقدس بھی نہیں
کوئی سکہ بھی نہیں ہوں کہ اچھالے مجھ کو

عمر بھر تیری محبت کو دعائیں دوں گی
ہجر کے غم زدہ موسم سے بچا لے مجھ کو

تو میرے ساتھ میری سوچ بھی روشن کردے
اور عطا کردے ہمیشہ کے اجالے مجھ کو

ہجر کی برف میں تو برف کی صورت نہ بنا
تو چرا سکتا اگر ہے تو چرا لے مجھ کو

تیری دنیا کوہی کردوں گی میں ریزہ ریزہ
’’کردیا تونے اگر میرے حوالے مجھ کو‘‘

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *