Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ شفقت عاصمیؔ

غزل ۔۔۔ شفقت عاصمیؔ

کب کسی انتہا سے ڈر تا ہوں
میں بُر ی ابتدا سے ڈرتا ہوں
جانے لے جائے کس طر ف کشتی
دوستو نا خُدا سے ڈرتا ہوں
تجھ کو رستے سے کیسے بھٹکا ؤں
میں کسی بدُعا سے ڈرتا ہوں
میں بہا در ضرور ہو ں لیکن
آپ سے بے وفا سے ڈرتا ہوں
کو ن سے پل میں جانے کیا ہو جا ئے
شہر کی اس فضا سے ڈرتا ہوں
شعربید اد ہی نہ ہو جا ئیں
اس لئے واہ وا سے ڈرتا ہوں
ہمنوا عاصمیؔ مر ا سایہ
اپنے ہی ہمنو ا سے ڈرتا ہو

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *