Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ شاہجہان سالف

غزل ۔۔۔ شاہجہان سالف

عجیب خواب تھا دونوں تھے اک لباس میں ہم
بجھے پڑے تھے دیے اور ان کے پاس میں ہم

اک ایک پل کی خبر ہے ہمیں ان آنکھوں کی
کئی برس سے ہیں اس قریہءِ اداس میں ہم

پرندگان انہیں گھونسلوں میں لے گئے تھے
تلاش کرتے رہے جگنووں کو گھاس میں ہم

نجانے کتنی شبیں ناتواں سے کندھوں پر
اٹھائے پھرتے رہے اک سحر کی آس میں ہم

پڑے نہ کم کبھی چادر جو پاؤں پھیلائیں
ملائیں خون پسینہ اگر کپاس میں ہم

دکھائی دیتی ہیں روشن ہماری آنکھیں ہمیں
نگاہِ یار بتا! مبتلا ہیں یاس میں ہم

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *