Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ سانی سید۔ کراچی

غزل ۔۔۔ سانی سید۔ کراچی

وہ جو اب ہر کسی سے جلتا ہے
اصل میں آپ ہی سے جلتا ہے

ہم تو خوش ہوں جو ذکرِموسیٰ ہو
سامری، سامری سے جلتا ہے

اِک دیا تھا سو تیل ختم ہوا
اب مِری زندگی سے جلتا ہے

اسمِ خالق سے کیا عذاب آیا
آدمی، آدمی سے جلتا ہے

رشک ہے ہی نہیں حسد ہے یہ دوست
تْو مری آگہی سے جلتا ہے

سانی ہر رات اس پری کا مکاں
اک عجب خامشی سے جلتا ہے

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *