Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل  ۔۔۔ بلال اسودؔ

غزل  ۔۔۔ بلال اسودؔ

خیال و خواب بہت، خواہش و سوال بہت
مگر ہم ایسوں کو لمحے کا بھی وصال بہت

میں اپنے آپ سے گم اور تو اپنے آپ میں گم
مجھے ہے عشق بہت اور تجھے جمال بہت

اَپر کلاس کے تلوؤں کو چاٹنے والے
خدا کے سامنے آتے ہیں تو مجال بہت

ارے! یہ وقت گزاری بھی کیا مصیبت ہے
جو دن میں سہل وہیں رات میں محال بہت

میں بچھڑے یار کی چوکھٹ سے لگ کے رونے لگا
پھر ایسے وجد میں آیا کیا دھمال بہت

بلا کی پیاس ہے اس کربلا کی مٹی میں
فرات ساتھ ہے پھر بھی ہوں میں نڈھال بہت

میں جینا چاہتا ہوں زندگی محبت میں
وگرنہ ویسے تو کرنے کو ہیں کمال بہت

یہ لوگ! جن کو رہے گوھر و طریر بھی کم
تو کیا خیال ہے ہو گا انہیں بلال بہت

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *