Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ اکرم خاور

غزل ۔۔۔ اکرم خاور

میں نے اُڑتا غبار دیکھا ہے
اپنی مٹی میں پیار دیکھا ہے

زندگی کے ہر ایک منظر کو
میں نے تو بے قرار دیکھا ہے

اپنی دھرتی پہ زندگی کے لئے
ننگے بچوں کو خوار دیکھا ہے

پانی کی بوند بوند کو ترسے
پنچھیوں کو بیمار دیکھا ہے

میرے ہاتھوں میں اسلحہ دے کر
حکمراں کو تجار دیکھا ہے

برہنا نسل میں نے دیکھی ہے
اور اسے بے حصار دیکھا ہے

میں نے شاہی پوشاک میں خاورؔ
شاہ کو با حصار دیکھا ہے

 

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *