Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔ اکرم خاورؔ

غزل ۔۔۔ اکرم خاورؔ

زخمِ دل کیونکر دکھاوں اور شکایت کیا کروں
اپنی حالت دیکھ کراس کی حمایت کیا کروں
جانتا ہوں ایک سورج سائباں بننے کو ہے
اے مرے دل مجھ پہ ہو ایسی عنایت کیا کروں
اس کی آنکھوں میں حیا ہے میری آنکھوں پر نقاب
اے خدا میں اپنی آنکھوں سے رعایت کیا کروں
جو سمجھتا ہی نہیں مجھ کو نا میری ذات کو
ایسے انساں سے محبت کی حمایت کیا کروں
خوش نصیبی ہے مری مجھ سے محبت اس کو ہے
میں ہی ہوں مصروفِ دنیا تو شکایت کیا کروں
اس جہاں میں دیکھ خاورؔ پیار کرنا جرم ہے
اے مرے ہمدم تمہیں اور اب نصیحت کیا کروں

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *