Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل  ۔۔۔ افضل مراد

غزل  ۔۔۔ افضل مراد

لائے کہساروں میں نغمگی کا دھیما پن
خیمہ بستیوں کے پاس دلکشی کا دھیما پن

تیری یاد کے جگنو راستوں میں لاتے ہیں
شام کے اترتے ہی روشنی کا دھیما پن

اس اجاڑ موسم پر جانے کتنی مدت سے
کب سے بھول بیٹھے ہیں ہم خوشی کا دھیما پن

جب بھی بھول ہوتی ہے راہ دھول ہوتی ہے
راستہ سجاتا ہے آگہی کا دھیما پن

دشمنوں نے بھی سن کر پھینک دی ہیں تلواریں
اس کے نرم لہجے میں سادگی کا دھیما پن

عرش سے پرے جا کر تجھ کو جوڑ جاتا ہے
ہم کو توڑ جاتا ہے بے خودی کا دھیما پن

رات کے اندھیرے میں دیکھ کر ترا چہرہ
راہ موڑ لیتا ہے چاندنی کا دھیما پن

بجلیاں چمکتی ہیں بارشوں کے موسم میں
مجھ کو روک لیتا ہے اک ہنسی کا دھیما پن

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *