Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غزل ۔۔۔۔۔ مشتاق احمد

غزل ۔۔۔۔۔ مشتاق احمد

تاریکیوں کو روشنی سے آشنا کریں

دیوارِ شب پہ پھر کوئی روشن دیا کریں

تخلیق ہو نئی اک محبت کی داستاں

زندہ جہاں میں اس طرح رسمِ وفا کریں

پھر اک نیا نکھار دیں غنچہ و گل کو ہم

پر کیف و عطر بیز چمن کی فضا کریں

ابھرے دلوں میں جذبہ تعمیر عہد کو

ذہنوں سے اپنے بغض و تعصب جدا کریں

ہر شخص ہو جہاں میں مسرت سے بہرہ ور

یہ زندگی کا قرض ہے، اس کو ادا کریں

Check Also

jan-17-front-small-title

گوادر کے مچھیرے  ۔۔۔ سلمیٰ جیلانی

کبھی ہم مچھیرے تھے جال میں پھنسی چھوٹی مچھلیاں پانی میں واپس پھینک ان کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *