Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » غالب عرفا نؔ

غالب عرفا نؔ

چلتی رہیں مسا فتیں پھر بھی سفرملا نہیں
جس کی تلا ش میں رہا ۔۔۔وہ تو مجھے ملا نہیں
پیا سا میں ایک ہی نہیں سب لو گ نشتہ کام ہیں
میر ے نو احِ شہر سے در یا کو ئی بہا نہیں
رُو داد سو ہنی کی ہو یا ما روی کی داستا ں
تہذیبِ حُسن و عشق کی تا ریخ کا پتا نہیں
آنکھو ں میں گفتگو ہو ئی دل میں اتر کے بس گئی
میں نے بھی کچھ کیا نہیں اُس نے بھی کچھ سُنا نہیں
وادی وہ خو اب زار تھی یا جلو ہ گا ہ حُسن تھا
کیا خو اب تھا کہ دیکھ کر جا گا تو پھر اُٹھا نہیں
لپٹی رہیں مُسا فتیں ہر سُو قد م قد م تو کیا
عر فا ن ز یست کا سفر میر ے لئے جچا نہیں

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *