Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » قصہ » سئے ایں ۔۔۔ ضیا شفیع

سئے ایں ۔۔۔ ضیا شفیع

ماہ گنج ے ماس۔۔۔۔ او ماہ گنج ے ماس جی۔۔۔
کجائے سہبے گہے ترا توار کنگا اوں۔
زیبلہ شودگا بوتگ اوں۔ زیبلہ سوچ و بن دئے۔ تو اے بگش تو راضی ئے یا نہ۔۔۔؟
راضی کجام گپے واستہ۔۔؟ ہما کہ دوشی من ترا سوج کرت۔ جبران و ماہ گنج ے آروسے گپ۔ ترا چے بوتا تئی خیال گاریں، انگہ کجائیں، نوکی تو دو زھگ آورتا کہ دوشی ایں گپاں بے خیال کنے۔ اگاں دگے چار پنچ زھگ بیارئے پدا من زانی منا ہم درست نہ کنے۔۔
منا بس اں ماہ گنج و زیبل۔۔۔ دگہ زھگ؟؟؟ حرامیں کہ دگہ زھگ پیدا کن ایں، ہمیشانی لاپ در نہ ایت دگہ زھگا چون کنے۔ گنو ک نہ اے تا شوم۔۔ آتے وتی زالبولی رگا، منا سئے بچک ہر وڑا شر تو لوٹیت۔ تئی مرضی، مرے یا مانے۔ اے ماہ گنج کجا گاریں۔۔۔۔؟ گوں وتی دتتکاں گوازی کنگا ایں۔
ماسی تا گنوکے۔ ماہ گنج ے آروس تیاریں و آ گوں دتتکاں سر مہ سریں۔پادا گم کن وتا برو توار کنے۔ ناگتا اگاں جبران ے پس آت و دیستے منی چم جہل بہ یاں۔ کہ منی نشار گوں دتتکاں۔۔۔۔۔۔ پادا گم کن وتا۔ ماہ گنج ے پس۔ چوش مکن نا۔ انگہ ماہ گنج سک کسان ایں، کسانی وتی جاہ انگا ماہ گنج وتی نیک و بدا ہم نزانت و دوازدہ سالی جنکے کدی آروس بوت کنت۔ لاتیں سال بلے کہ جندے کمیں مزن بہ بیت و چار لبز بہ وانیت۔ پدا ہر جاہ کہ تئی دلہ گشت۔ بے شک ہمودا آروس بدیگے۔۔تا کدی پہ چم کرت۔ منی گس و منی زھگانی نیاما ترا گپ نیست۔ تا یک زالبول ئے زالبولے وڑا بہ بئے۔ تا کجام وانت کہ انوں ماہ گنجا وانینے۔ ہچ زرورت نہ ایں۔ جبران کجام سکول ے پچ کرتا کہ شدا رؤت و اودا وانینیت۔
ماہ گنج ے پس ۔۔۔۔۔ بلیں۔۔۔۔۔ بلیں۔۔۔۔ تا۔۔۔ تا ماہ۔۔ گنج ے جندا یک وارے سوج کن آ چے گشیت۔ من وا سک ترسگا اوں۔ زھگ سک کسانیں۔ پہ خدائے ناما لاتیں سال انتظار کن۔ باز گپ مکن۔۔۔۔ یک ، دو، سئیا من دئیر نہ کنیں۔ پدا بلے شر بہ بئے شارے تا۔
گوں یک و دو و سئے اشکگا ماہ گنج ے ماس سک دل پدرد بوت۔ چمے ارسا پر بوتاں، گوں پرئیں دلہ دیما وتی کرت و گشتے۔ ماہ گنج ے مالکے وتے۔ ہر چی کنے منا گپ نیست۔ بلیں۔۔۔۔
بس کن۔۔۔۔ برو زیبلہ واپیں و گم بئے۔ ماہ گنج سلطان ے مستریں جنک ات۔ چارمی جماعتا وانگا ات و دوازہ سال اتئے۔ سلطان و مستریں براس ظریف ملکانی سرا زار بوت اتاں۔ انوں یک سالے بوت ات کہ شارے میر و ملایاں ایشانی پیسلہ کرت ات۔ ملامت چوش کہ سلطان ات ہمے واستہ دیوانا ہمے پیسلہ کرت ات کہ سلطان وتی مستریں جنکا ظریف ے بچک جبران بہ دنت و آروس جوپاگا پد بہ بیت۔انوں سلطان میر و ملایانی پیسلہ و وتی مستریں براسے دیما مجبور ات۔ پدا سلطان ے ٹریکٹر ہم جبران ے دستا ات۔ ہمے واستہ سلطان ہر وڑا ماہ گنج و جبران ے آروسے واستہ بے واب ات۔ بلیں ماہ گنج ے ماس چوش کی یک سر پد و دانائیں زالے ات۔، آ سر پد ات کہ منی جنکے اگاں کساں سالیا آروس دیک بوت پدا آئے زند سک تبا و برباد بیت۔ ہمے واستہ ہر وھدا کہ سلطان جبران و ماہ گنج ے آروسے گپ جنت و گڑا ماہ گنج ے ماس باز کوشست کنت کہ من سلطان سر پد بہ کناں۔ بلیں جاہلیں کردے دیما زالے کجا چلیت۔۔
جوپاگ ہلاس بوھگا ات۔ و سلطان روچ پہ روچا ماہ گنج و جبران ے ؤآروسے واستہ بے واب بواں ات۔ یک روچے جبرانے پسا کلوہ دیم دات ات کہ من اشکتگ کہ منی نشار گوں ریسگے دومی جنکاں وانگجاہ پہ وانگاہ رؤت۔ شما آئی پاداں بدارت۔ چیا کہ اے وا بلائیں شرمے گپے بیت کہ ہمے گسے غیرت دنیا ے دیما ملانا وانگاہ بہ رؤت ۔۔۔۔۔ اے ھالے اشکگا پد ماہ گنج ے وانگے راہبند ہم بند کنگ بوت۔ ماہ گنجا وتی درائیں دتتک سوتاں و شہ لاپے ورگا کپت۔ ماہ گنج ے ماسا شہ اے برداشت نہ بوت۔ آئی وتی دوئیں زھگ زرت اں و اتی ماسے گسا شت۔
لاتیں روچ جواں گوست ۔ سلطانا دیست کہ انوں نہ ماہ گنج ے ماس کیت ایں نہ کہ آئی ھال۔ گڑا آئی پہ وتی وسو و ناکوہ کلوہ و قاصد کرت منا شمے جنک درکار نہ ایں۔ منی زھگ منا دو روچا دیگ بہ باں۔ اگاں نہ من گڑا مجبور بیاں و ماہ گنج ے ماسے سئے ایں دیاں۔۔۔۔۔۔ سئے ایں نے گپ گوں ماہ گنج ے پیرک و بلکا جواں نہ گوست۔ آیاں ماہ گنج ے ماسارا سرپد کرت۔ کہ تئی مرد ہر چی گشی تو آئی گپاں بہ زور و ماہ گنجا آروس بدے۔ اگاں نہ اے ترا گوں جوانیں راہے نہ رؤت۔ ۔
زالبول ے دستا چے بوت کنت۔ پدا مئے چاگردے تہا۔۔۔ ہچ پہ ہچ۔۔۔۔ اگاں زالبولے وتی حق ے واستہ چیزے بہ گشیت ہم گڑا آئیرا ترسینگ بیت کہ اگاں تو چوش کرت۔۔۔ یا آ وڑ کرت من ترا سئے ایں دیاں۔۔۔۔۔۔۔۔ پدا اے یک بلائیں ، ہنے چاگردے تہا۔۔۔ او۔۔۔۔ !
ماہ گنج ے ماسے ہم ہمے ھال ات آئی وتی دوئیں زھگ زرت اں و پدا سلطان ے گسا شت۔سلطانا چار مردم توار جت و جمعہے شپا کساں سالیں ماہ گنج و جبران ے نکاح وانگ بوت۔ماہ گنج ے ماسا گوں پرانکین دلہ ماہ گنجا رخصت کرت۔
وھد و پاساں کئے داشت کنت۔ وھدے دیما ہرکس مجبوریں۔ جبران و آئی پس ظریفا دیست کہ ہمے وار انوں راستیں۔۔۔۔ جنک ہم رست۔۔۔۔۔ ملک ہم رستاں۔۔۔۔۔ و ۔۔۔۔ پدا ٹریکٹر انچا جبران ے دستا ایں۔ گڑا چوں نہ سلطان زار کنگ بہ بیت۔ ۔۔۔۔۔ یک شپے جبران و آئی پس ظریفا پہ ماہ گنج ے پس و ماساں کلوہ کرت کہ شپی شمے ہمے گسا نانیں۔۔ماہ گنج ے ماس سک وش بوت کہ ہمے نیمونا وتی پلیں ماہ گنج جانا ہم گنداں، باریں چونیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔ وختے کہ شپا مر د و جنین شت اں گڑا چے گنداں کہ ماہ گنج یک نیمگا نشتگ و زار زارا گریوگا ایں و جبران و آئی پس وتی وڑاں۔
سلطان و ماہ گنجے ماسا کہ وتی جنک گوں ارس و وتی زاماس گوں بچکندگا دیست گڑا سر پد بوت کہ ہمرا چے واستہ کلوہ کنگ بوتا۔ آئیاں ہچ نہ گشت و وتی جنک دستا گپت و پہ گسا وختے رواں بوت اں گڑا ظریفا پشتا شہ توار دات۔۔۔۔۔۔۔ سلطان۔ اگاں تو وتی جنک برت گڑا باندہ روچے درایگا سر ایشی سئے اینانی واستہ ہم ایگا بے ھال مہ بو۔ سلطانا ماہ گنجے ماسے دیمگا کمو چارت و ماہ گنجے پیشانی چک کرت و ماہ گنجے ماسارا گریوانا گشتے۔ برواں ماہ گنجے ماس۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ماہ گنج ہمے واستہ ہما روچا مرت کہ من میر و ملایانی گپ زرت و پہ وتی عزتے ناما وتی جنک بکشات۔

Check Also

March-17 sangat front small title

یہ دنیا والے ۔۔۔ بابوعبدالرحمن کرد

(معلم۔ فروری 1951) مہ ناز ایک غریب بلوچ کی لڑکی تھی۔ وہ اکثر سنا کرتی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *