Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » بسلسلہ عالمی یوم خواتین ۔۔۔ علی بابا تاج

بسلسلہ عالمی یوم خواتین ۔۔۔ علی بابا تاج

مرد ہو یا کہ زن
زندگی ایک بار
سب کے حصے میں ہے
درد اور چین کی
یوں تو اب ہر گھڑی
سب کے قصے میں ہے
وقت ہے قصہ گو
وقت رکتا نہیں
آدمی آج بھی
گردشِ وقت میں
اپنی تاریخ میں
ہے الجھتا ہوا
خواب ب±نتا ہوا
اپنے آغاز سے
تا بہ انجام یہ
نصف دو نیم ہے
آدمی آج بھی
سوچتا
سوچتا
خود سے پوچھتا ہے
کہ ایک صفحہ جلا یا
کہ ایسا ہے کہ
آتش فکر سے
نصف دو نیم کی ساری تاریخ کا
پورا صحیفہ جلا؟
ایک ایسے دور میں
ہم کہ مجبور ہیں
زن ہو تم یاکہ مردجو بھی ہو
آگہی روگ ہے
اپنے ہونے کا جب بھی احساس ہو
کہ، زمان و مکاں سے پرے
سوچنے کا فائدہ؟
اردگرد کتنے ہی
مسئلے
پیچ در پیچ
پیچیدہ رہے
کوئی کیونکر بھلا
نانِ شبینہ سے ورا
ضرورت سے سوا
سوچے گا کہ
آج عورت بھی کہیں
زندہ رہنے کو یہ
سانس لیتی بھی ہے۔۔۔

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *