Find the latest bookmaker offers available across all uk gambling sites www.bets.zone Read the reviews and compare sites to quickly discover the perfect account for you.
Home » شیرانی رلی » اگر تم مری دوست ہوتیں ۔۔۔ زمان ملک

اگر تم مری دوست ہوتیں ۔۔۔ زمان ملک

اگر تم مری دوست ہوتیں
تو میں تم سے کہتا وہ باتیں
جو اب تک سنی ہیں
نہ آئندہ سننے کا سوچا ہے تم نے
.
اگر تم مری دوست ہوتیں
تو میں اک ستارے کو کشتی بنا کر
بٹھا کر تمہیں اس میں
کھیتا ہوا اس خلا کے سمندر میں
لا انتہا دید کے ساحلوں تک
دکھاتا وہ صورت
جو صورت کے پردے میں گم ہے
ابد میں ازل گھول کر
ایک لمحہ بناتا
اور اس لمحے کا ایک جرعہ
تمہیں بھی پلاتا
اگر تم مری دوست ہوتیں
.
اگر تم مری دوست ہوتیں تو میں
میں نہ رہتا
میں گزرے زمانوں میں
آتے زمانوں کا
تیراک بنتا
میں روکے ہوئے سانس
نیچے ہی نیچے اترتا ہوا
سطح سے لے کے آتا
وہ لولو، وہ مرجاں
میں جس میں دکھاتا جہاں
پہلے تم نے جو دیکھا نہ ہوتا
( 2 )
یہ سب کچھ
یہ لا انتہا اور مقدس
سمندر رگوں میں
ستارے ہمارے جواہر
یہ سب کچھ وراثت ہماری
تو ہم ہست کے ساحلوں سے
نکلتے سفر پر
یہ سب کچھ
یہ لا انتہا اور مقدس ہماری وراثت
ہم ان میں رواں
اور نہ ان سے جدا
نور کے رتھ پہ بیٹھے ہوئے
ہاں اگر تم مری دوست ہوتیں

Check Also

March-17 sangat front small title

نظم ۔۔۔ زہرا بختیاری نژاد/احمد شہریار

میں جبراً تم سے نفرت کروں گی تمہارے عشق سے میری زندگی کے حصے بخرے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *